’2010 میں انگلینڈ سے پہلے ویسٹ انڈیز کے خلاف ورلڈ کپ میچ میں بھی سلمان بٹ کرپشن میں ملوث تھے‘ قومی ٹیم کے اہم کھلاڑی نے نیا پنڈورا باکس کھول دیا

’2010 میں انگلینڈ سے پہلے ویسٹ انڈیز کے خلاف ورلڈ کپ میچ میں بھی سلمان بٹ کرپشن ...
’2010 میں انگلینڈ سے پہلے ویسٹ انڈیز کے خلاف ورلڈ کپ میچ میں بھی سلمان بٹ کرپشن میں ملوث تھے‘ قومی ٹیم کے اہم کھلاڑی نے نیا پنڈورا باکس کھول دیا

  


لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن)قومی کرکٹ ٹیم کے سابق آل راﺅنڈر عبدالرزاق نے سابق کپتان سلمان بٹ پر انگلینڈ کے خلاف سیریز سے قبل بھی کرپشن میں ملوث ہونے کا الزام عائد کردیا۔

نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے سابق آل راﺅنڈر عبدالرزاق نے دعویٰ کیا کہ 2010 میں انگلینڈ کے دورے سے قبل ہی پاکستان کے سابق کپتان سلمان بٹ کرپشن میں ملوث تھے۔

عبدالرزاق نے ٹی 20 ورلڈ کپ میں پاکستان کے ویسٹ انڈیز کے خلاف میچ کا حوالہ دیا اور کہا کہ اس میچ میں سلمان بٹ نے جان بوجھ کر بعض گیندوں پر رنز نہیں بنائے اور بار بار کہنے کے باوجود ایک رن لے کر مجھے موقع نہیں دیا۔

سابق آل راﺅنڈر نے کہا کہ میچ میں سلمان بٹ کے رویے پر انہیں شک ہوا کہ وہ جان بوجھ کر ایسا کر رہے ہیں، انہوں نے اپنے شکوک کا اظہار اس وقت ٹیم کے کپتان شاہد آفریدی سے بھی کیا تھا۔

سابق آل راو¿نڈر نے اسپاٹ فکسنگ اسکینڈل کا ذمہ دار پاکستان کرکٹ بورڈ کو قرار دیتے ہوئے کہا کہ بورڈ نے سارے معاملے کو صحیح طرح سے نہیں سنبھالا جس پر آئی سی سی نے مداخلت کرتے ہوئے کیس خود حل کرنے کا فیصلہ کیا۔

خیال رہے کہ قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان سلمان بٹ، باﺅلرز محمد آصف اور محمد عامر پر 2010 میں انگلینڈ کے خلاف سیریز میں سپاٹ فکسنگ کے الزامات لگے تھے جو بعد ازاں درست ثابت ہوئے اور تینوں کو سزاﺅں کا سامنا کرنا پڑا تھا۔ سزا مکمل ہونے کے بعد محمد عامر کی ٹیم میں واپسی ہوچکی ہے جبکہ سلمان بٹ اور محمد آصف کو ابھی تک ٹیم میں شامل نہیں کیا گیا۔

مزید : کھیل