بجٹ دستاویز غلط بیانی پر مبنی ہے، شاہد خاقان عباسی

بجٹ دستاویز غلط بیانی پر مبنی ہے، شاہد خاقان عباسی

  

اسلام آباد(آن لائن)سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے بجٹ کے حوالے سے رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ بجٹ دستاویز غلط بیانی پر مبنی ہے،کورونا کے لئے کچھ مختص نہیں کیا۔حکومت عوام کی جیب سے پٹرولیم لیوی کی مدمیں 200 ارب روپے اضافی نکالے گی۔سود کی ادائیگی کے لئے قرض حاصل کرکے دلدل میں پھنس رہے ہیں۔ہماری حکومت نے قرض لے کر شرح نمو میں اضافہ کیا۔جمعہ کے روز نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ حکومت کی جانب سے پیش کئے گئے بجٹ میں سچ کی قلت ہے۔حکومت نے اضافی ٹیکس نہ لگانے کا دعویٰ کیا لیکن 190ارب روپے کا پٹرولیم لیوی ٹیکس عائد کردیاگیا۔بجٹ ڈاکومنٹ میں ہمیشہ اعداد کا ہیر پھیر ہوتا ہے حکومتیں جو چیزیں چھپانا چاہتی ہیں وہ چھپا لیتی ہیں اور جن چیزوں کو نمایاں کرنا ہوتا ہے وہ نمایاں کی جاتی ہیں جبکہ موجودہ بجٹ ڈاکومنٹ مکمل طور پر غلط بیانی پر مبنی ہے۔کورونا کے حوالے سے کوئی ریلیف نہیں دیاگیا۔حکومت سے معیشت نہیں چل رہی گروتھ منفی ہے۔گزشتہ بجٹ کے نمبرز چیک کرلیں تو حقائق سامنے آجائیں گے۔

شاہد خاقان عباسی

مزید :

صفحہ آخر -