بھارت کا مذہبی آزادی کے امریکی کمیشن کو ویزا دینے سے انکار

    بھارت کا مذہبی آزادی کے امریکی کمیشن کو ویزا دینے سے انکار

  

نئی دہلی (این این آئی)بھارت نے امریکی کمیشن برائے بین الاقوامی مذہبی آزادی کی ملک میں اقلیت کو درپیش مسائل کا زمینی جائزہ لینے کی غرض سے دی گئی سفری درخواست مسترد کردی ہے اور کہاہے کہ غیرملکی پینل کو بھارتی شہریوں کے آئینی حقوق کا جائزہ لینے کا کوئی اختیار نہیں ہے۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق امریکی کمیشن برائے بین الاقوامی مذہبی آزادی کی طرف سے مذکورہ اپیل اپریل میں کی گئی تھی۔رپورٹ میں بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کی حکومت کے عہدیداروں کے خلاف پابندیوں پر زور دیا گیا تھا جنہوں نے اقلیتی مسلمانوں کو نئی شہریت سے متعلق متنازع قانون سے خارج کردیا تھا۔بھارت کے وزیر خارجہ سبرامنیم جئے شنکر نے کہا کہ حکومت نے امریکی کمیشن پینل کو مذہبی آزادی سے متعلق سروے کی سختی سے تردید کی جنہیں بھارتی شہریوں کے حقوق کا بہت کم علم تھا۔وزیر خارجہ سبرامنیم جئے شنکر نے اسے متعصبانہ قرار دیا۔نئی دہلی میں امریکی سفارتخانے نے تمام سوالات کو واشنگٹن ڈی سی میں قائم کمیشن کے حوالے کیا جہاں سے فوری طور پر جواب سامنے نہیں آیا۔یہ کمیشن امریکی حکومت کا ایک دو طرفہ مشاورتی ادارہ ہے جو بیرون ملک مذہبی آزادی پر نظر رکھتا ہے اور صدر، سیکریٹری خارجہ اور کانگریس کو پالیسی سے متعلق سفارشات دیتا ہے۔

ویزا سے انکار

مزید :

صفحہ آخر -