صوابی‘ رقم تنازعہ‘ مزدور کی فائرنگ سے مالک کی بیوی اور بیٹی جاں بحق

صوابی‘ رقم تنازعہ‘ مزدور کی فائرنگ سے مالک کی بیوی اور بیٹی جاں بحق

  

صوابی(بیوروپورٹ) موضع جلسئی میں مزدوری کی رقم کے تنازغہ پر مزدور نے مالک کی بیوی کو بیٹی سمیت فائرنگ کر کے قتل کر دیا۔ چھوٹا لاہور پولیس نے بر وقت کارروائی کر کے ملزم کو آلہ قتل پستول سمیت گرفتار کر لیا۔ معین خان سکنہ جلسئی نے تھانہ لاہور میں ایف آئی آر درج کراتے ہوئے بتایا کہ وہ راولپنڈی میں رنگ سازی کا کام کر رہے ہیں ان کے ساتھ ضیاء محمد، میر آمان ساکنان جلسئی بھی یومیہ دیہاڑی پر ان کے ساتھ کام کر رہے تھے۔دس جون کو میر آمان نے مزدوری کی رقم کی ادائیگی کے سلسلے میں میرے ساتھ تلخ کلامی کی جس پر میں نے ان کی منت سماجت کر کے کچھ رقم ادا کی اور ان سے مزدوری کرنے کی ہدایت کی جس پر وہ ایسا کرنے کو تیار نہیں تھا اور اسی روز اپنے گاؤں جلسئی واپس چلے گئے میں نے اپنی بیوی کو موبائل پر رابطہ کر کے میر آمان کو مبلغ چار ہزار روپے نقد دینے کا کہا رقم ادا کرنے کے علاوہ میرے کہنے پر ان سے معذرت کی جس پر میر آمان نے میری بیوی کو بتایا کہ معین خان نے مجھے رلایا ہے میں بھی ان کو رلاونگا۔ منگل کی صبح جب میرا بیٹا ضیاء الرحمن گھر آیا تو میری بیوی مسماۃ (ز) اور پندرہ سالہ بیٹی مسماۃ(م)گھر کے اندر قتل شدہ پڑی تھیں۔ مجھے پورا یقین اور تسلی ہے کہ میری بیوی اور بیٹی کو میر آمان سکنہ جلسئی نے قتل کئے ہیں وجہ عناد یہ ہے کہ ایک دو یوم قبل میرا اور میر آمان کے مابین رقم کی ادائیگی پر تلخ کلامی اور گالم گلوچ ہوئی تھی۔ چھوٹا لاہور پولیس نے ایف آئی آر درج ہونے پر فوری کارروائی کر تے ہوئے ملزم میر آمان کو آلہ قتل سمیت دو گھنٹے کے اندر اندر گرفتار کر لیا۔ ڈی ایس پی راز محمد خان اور ایس ایچ او شفیق احمد نے ڈی پی او صوابی کی ہدایت پر فوری کارروائی کی ملزم نے اقرار جرم کر لیا۔ پولیس نے ملزم کے خلاف ایف آئی آر درج کر کے تفتیش شروع کر دی ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -