کیا آپ کو معلوم ہے سیف علی خان کے دادا نواب آف پٹودی برطانوی کرکٹ ٹیم کا حصہ تھے، انہیں ٹیم سے کس ایک واقعہ کی وجہ سے نکال دیا گیا؟ وہ بے مثال بات جو بہت ہی کم لوگوں کو معلوم ہے

کیا آپ کو معلوم ہے سیف علی خان کے دادا نواب آف پٹودی برطانوی کرکٹ ٹیم کا حصہ ...
کیا آپ کو معلوم ہے سیف علی خان کے دادا نواب آف پٹودی برطانوی کرکٹ ٹیم کا حصہ تھے، انہیں ٹیم سے کس ایک واقعہ کی وجہ سے نکال دیا گیا؟ وہ بے مثال بات جو بہت ہی کم لوگوں کو معلوم ہے

  

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بالی ووڈ اداکار سیف علی خان کے دادا نواب آف پٹودی افتخار علی خان برطانوی کرکٹ ٹیم کا حصہ تھے لیکن انہیں ایک ایسی وجہ سے ٹیم سے نکال دیا گیا تھا کہ سن کر آپ حیران رہ جائیں گے۔ ٹائمز آف انڈیا کے مطابق 1930ء کی دہائی میں انگلینڈ کی ٹیم کے کوچ نے ’باڈی لائن‘کی حکمت عملی وضع کی تھی، جس میں باؤلرز کو اس طرح گیند پھینکنی ہوتی تھی کہ وہ ٹھپہ کھا کر سیدھی بلے باز کے جسم پر لگے تاکہ وہ اسے کھیل نہ سکے۔

اس حکمت عملی کو ’فاسٹ لیگ تھیوری باؤلنگ‘ ( theory bowlling Fast leg)بھی کہا جاتا ہے۔ یہ حکمت عملی آسٹریلیا کے خلاف سیریز جیتنے اور اس وقت کے خطرناک آسٹریلوی بلے باز ڈون بریڈمین کو سکور بنانے سے روکنے کے لیے بنائی گئی تھی۔اس حکمت عملی کے تحت فیلڈنگ بھی ایک مخصوص انداز میں کھڑی کی جاتی تھی۔

 افتخار علی نے اس سیریز کے پہلے ٹیسٹ میچ میں 102رنز بنائے تھے۔ یہ ان کا اپنا بھی پہلا میچ تھا۔ جب اتنی اچھی اننگ کھیلنے کے بعد فیلڈنگ کی باری آئی تو افتخار علی خان نے باڈی لائن حکمت عملی کے تحت فیلڈنگ میں کھڑے ہونے او ربلے باز کو نقصان پہنچانے والی حکمت عملی کا حصہ بننے سے انکار کر دیا، جس پر انہیں ٹیم سے نکال دیا گیا۔ انہوں نے اپنے کرکٹ کے کیریئر میں برطانوی ٹیم کے ساتھ صرف 6میچ کھیلے۔

مزید :

تفریح -