تحریک انصاف کی انتخابی مہم کے اخراجات اٹھانے والے ابراج گروپ کے عارف نقوی نئی مشکل میں پھنس گئے، تہلکہ خیز خبر

تحریک انصاف کی انتخابی مہم کے اخراجات اٹھانے والے ابراج گروپ کے عارف نقوی ...
تحریک انصاف کی انتخابی مہم کے اخراجات اٹھانے والے ابراج گروپ کے عارف نقوی نئی مشکل میں پھنس گئے، تہلکہ خیز خبر

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) وزیراعظم عمران خان کی سابق اہلیہ نے اپنی کتاب میں انکشاف کیا تھا کہ دبئی میں مقیم پاکستانی کاروباری شخص عارف نقوی نے 2013ءکے انتخابات میں تحریک انصاف کی انتخابی مہم کے 60فیصد سے زائد اخراجات اٹھائے تھے۔ ان پاکستانی انتخابات کے کچھ عرصے بعد ہی عارف نقوی کی کمپنی ’ابراج گروپ‘ دیوالیہ ہونے کے قریب پہنچ گئی اور اس میں سرمایہ کاری کرنے والوں نے الزام عائد کر ڈالا کہ عارف نقوی نے ان کا سرمایہ اپنی سیاسی سرگرمیوں پر خرچ کر ڈالا ہے۔اس کے بعد ابراج گروپ کے باقاعدہ دیوالیہ ہونے کا اعلان کیا گیا اور لیکوئیڈیٹرز کو اس کے اختتامی کھاتہ جات کی جانچ پڑتال پر معمور کر دیا گیا۔ اب ان لیکوئیڈیٹرز نے بھی انکشاف کر ڈالا ہے کہ عارف نقوی نے کمپنی سے ساڑھے 38کروڑ ڈالر (تقریباً 63ارب 33کروڑ روپے) چوری کیے تھے۔

رپورٹ کے مطابق ابراج گروپ کے بانی عارف نقوی کمپنی دیوالیہ ہونے کے بعدفرار ہو کر لندن چلے گئے، جہاں اب انہیں ان کے گھر میں ہی زیرحراست رکھا جا رہا ہے۔ ان کے خلاف دبئی، امریکہ اور برطانیہ میں مقدمات چل رہے ہیں۔ لیکوئیڈیٹرز کی اس رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ پراسیکیوٹرز نے عارف نقوی پر جتنی رقم غبن کرنے کا الزام عدالت میں عائد کر رکھا ہے، انہوں نے اس سے زیادہ رقم کا غبن کیا۔ امریکی عدالت میں پراسیکیوٹرز نے موقف اختیار کر رکھا ہے کہ عارف نقوی نے 25کروڑ ڈالر کی رقم چوری کی لیکن ابراج گروپ کے معاملات کی تحقیق کرنے والے لیکوئیڈیٹرز نے بتایا ہے کہ انہوں نے ساڑھے 38کروڑ ڈالر چوری کیے۔ واضح رہے کہ ابراج گروپ کے تحت 40سے زائد نجی ایکوئٹی فنڈز چلتے تھے جن کے مجموعی اثاثے 14ارب ڈالر سے زائد تھے۔ 2018ءمیں جب یہ گروپ دیوالیہ ہوا تو یہ دنیا کی دیوالیہ ہونے والی سب سے بڑی نجی ایکوئٹی فرم تھی۔

مزید :

برطانیہ -