سندھ نے بیراجز پر  ارسا کی جانب سے تعینات غیر جانب دار مبصرین کی تعیناتی مسترد کردی

سندھ نے بیراجز پر  ارسا کی جانب سے تعینات غیر جانب دار مبصرین کی تعیناتی ...
سندھ نے بیراجز پر  ارسا کی جانب سے تعینات غیر جانب دار مبصرین کی تعیناتی مسترد کردی

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن )سندھ  حکومت نے  بیراجز پر ارسا  کی جانب سے  غیر جانب دار مبصرین کی تعیناتی مسترد کردی ہے۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق  سندھ حکومت کے اس فیصلے سےسندھ اور پنجاب کے درمیان پانی کی تقسیم کا تنازعہ حل ہونے کی امید پھر دم توڑ گئی ہے۔سندھ حکومت کا کہنا ہے کہ  کہ اتفاق رائے کے بغیر بیراجوں پر غیر جانب دار مبصرین تعینات نہیں کیے جاسکتے۔ محکمہ آب پاشی سندھ نے مبصرین کی تعنیاتی اور خدشات سے متعلق خط ارسال کردیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ صوبوں میں اتفاق رائے کے بغیر ارسا کی کوئی تجویز قابل قبول اور قابل عمل نہیں۔ خط میں واضح کیا گیا ہے کہ نہ ہم غیر جانب دار مبصرین تعینات کریں گے اور نہ ڈیٹا لینے دیں گے۔محکمہ آب پاشی سندھ نے آبی وسائل کی تقسیم سے متعلق سنگین خدشات اور اعتراضات پر مبنی خط چیئرمین اور سیکریٹری ارسا کوارسال کیا ہے جس میں کہا ہے کہ ارسا میں اکثریت سے مسترد ہونے کے باوجود تونسہ پنجند کینال چلائی جارہی ہے، آبی معاہدے پر عمل سے متعلق سنگین آئینی خلا ہے، سندھ پنجاب کے بیراجوں پرمانیٹرنگ کو مسترد کرتے ہیں، پانی کے مسئلے کے حل کے لیے قابل قبول اورباہمی مشاورت سے طریقہ کار اختیار کیاجائے۔

واضح رہے کہ ارسا (انڈس ریور سسٹم اتھارٹی) نے پانی کے اخراج کی صحیح رپورٹنگ کے لیے مبصرین کی تعیناتی کی تجویز دی تھی۔ پنجاب اور ارسا کا مؤقف تھا کہ غیر جانب دار مبصرین کے بغیر غلط فہمیاں دور نہیں ہوں گی۔

مزید :

قومی -