بڑے اسلامی ملک میں ہسپتال پر حملہ، ہر طرف تباہی ، اتنے لوگ مارے گئے کہ آپ کو بھی افسوس ہوگا

بڑے اسلامی ملک میں ہسپتال پر حملہ، ہر طرف تباہی ، اتنے لوگ مارے گئے کہ آپ کو ...
بڑے اسلامی ملک میں ہسپتال پر حملہ، ہر طرف تباہی ، اتنے لوگ مارے گئے کہ آپ کو بھی افسوس ہوگا
سورس: Twitter

  

دمشق (ڈیلی پاکستان آن لائن) ترک حمایت یافتہ جنگجوؤں کے زیر قبضہ شام کے شہر عفرین میں ایک ہسپتال پر راکٹ حملے میں 13 افراد ہلاک اور 27 زخمی ہوگئے۔

خبر ایجنسی روئٹرز کے مطابق عفرین میں دو آرٹلری حملے کیے گئے۔ پہلے حملے میں رہائشی علاقہ نشانہ بنا جب کہ دوسرے حملے میں ہسپتال کو نشانہ بنایا گیا۔ ترک حکام اور ذرائع نے حملے کی تصدیق کی ہے اور بتایا کہ ہے کہ عفرین میں الشفا ہسپتال کو نشانہ بنایا گیا جس میں طبی عملے کے دو افراد بھی جان کی بازی ہارے ہیں۔ حملے کے بعد ہسپتال میں سروسز معطل ہو کر رہ گئی ہیں۔

تاحال یہ واضح نہیں ہے کہ حملہ کس نے کیا ہے تاہم شیلنگ اس علاقے سے کی گئی ہے جہاں شامی افواج اور کرد جنگجو تعینات ہیں۔ ترک وزارت دفاع نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ ہسپتال پر راکٹ داغے گئے، اس کے علاوہ آرٹلری سے شیلنگ بھی کی گئی جس کے نتیجے میں 13 افراد ہلاک اور 27 زخمی ہوئے ہیں۔ عفرین سے ملحقہ ترک صوبے کے گورنر نے حملے کا ذمہ دار شامی کرد جنگجو گروپوں کو قرار دیا ہے۔

مزید :

عرب دنیا -