تاجر کو اغواءکے بعد مبینہ تشدد کا نشانہ بنانے کا الزام، ن لیگی رہنما کے بھائی سمیت 16 افراد کیخلاف مقدمہ درج

 تاجر کو اغواءکے بعد مبینہ تشدد کا نشانہ بنانے کا الزام، ن لیگی رہنما کے ...
 تاجر کو اغواءکے بعد مبینہ تشدد کا نشانہ بنانے کا الزام، ن لیگی رہنما کے بھائی سمیت 16 افراد کیخلاف مقدمہ درج

  

 جڑانوالہ(ڈیلی پاکستان آن لائن )جڑانوالہ 60 سالہ تاجر کو اغواءکے بعد مبینہ تشدد کا نشانہ بنانے کے الزام پر مسلم لیگ ن کے مرکزی رہنما شاہد اقبال اعوان کے بھائی سمیت 16 افراد کیخلاف مقدمہ درج.

تفصیلات کے مطابق منڈی بچیانہ کے رہائشی بلال ولد عبدالغفار نے پولیس کو بتایا کہ سائل نے الیکڑک سٹور کی دکان بنا رکھی ہے جبکہ سائل کا والد کریانہ شاپ میں موجود تھا کہ اسی دوران الزام علیہ ملک عبدالرشید ہمراہ 15 کس کار اور موٹرسائیکلوں پر سوار ہو کر آئے اور والد کی دکان میں زبردستی داخل ہو کر سائل کے والد کو مارنا شروع کر دیا بعدازاں سائل کے والد کو کار میں ڈال کر ساتھ لے گئے اور دکان سے اڑھائی لاکھ روپے نکال لیے.

الزام علیہان نے سائل کے والد کی حبیب سے بھی 80 ہزار روپے نکال لیے اور اڑھائی گھنٹے تک نامعلوم مقام پر لے جا کر تشدد کا نشانہ بنایا بعدازاں والد کو ریلوے پھاٹک کے قریب پھینک کر فرار ہو گئے، سائل کے پاس وقوعہ کی ویڈیو بھی موجود ہے. پولیس تھانہ لنڈیانوالہ نے مسلم لیگ ن کے مرکزی رہنما ملک شاہد اقبال اعوان کے بھائی سمیت 16 افراد کیخلاف مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کر دی ہے.

یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ تاجر کو اغواءکے بعد مبینہ تشدد کا نشانہ بنانے کے واقعہ پر منڈی بچیانہ کے تاجروں نے روڈ بلاک کرکے احتجاج کیا اور شٹرڈاون ہڑتال کی کال دی تھی جس پر پولیس نے تشدد کا نشانہ بننے والے تاجر کے بیٹے کی مدعیت میں مقدمہ درج کیا ہے۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -فیصل آباد -