عدالت کا 4سالہ بچے کی بازیابی کے لیے کارروائی جاری رکھنے کا حکم 

عدالت کا 4سالہ بچے کی بازیابی کے لیے کارروائی جاری رکھنے کا حکم 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

کراچی (اسٹاف رپورٹر)سندھ ہائی کورٹ نے سول اہسپتال سے 4 سالہ بچے کی گمشدگی سے متعلق درخواست پر کارروائی جاری رکھنے کا حکم دے دیا۔بدھ کو سندھ ہائی کورٹ میں سول اہسپتال سے 4 سالہ بچے کی گمشدگی سے متعلق درخواست پر سماعت ہوئی۔درخواست کی سماعت جسٹس نعمت اللہ پھلپھوٹو کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے کی۔عدالت نے تفتیشی افسر سے استفسار کیا کہ بچے کی بازیابی کے لئے کیا اقدامات کیے گئے ہیں؟تفتیشی افسر نے موقف اختیار کرتے ہوئے بتایا کہ سی سی ٹی وی فوٹیج کا معائنہ کیا گیا ہے سی سی ٹی وی کیمرے اہسپتال کے گیٹ تک محدود ہے۔تفتیشی افسر نے بتایا کہ سی سی ٹی وی فوٹیج میں نظر آنے والے اغوا کار کی تصویر نادرا کو بھیج  دی ہے لیکن اب تک اس کی شناخت نہیں ہوسکی۔سماعت کے دوران بچے کے والد نے آہ و بکا کرتے ہوئے کہا کہ 4 سالہ بچہ محمد حسین کو سول اہسپتال سے اغوا کرلیا گیا۔سی سی ٹی وی فوٹیج میں اغوا کار کو واضح طور پر دیکھا جا سکتا ہے۔بچے کے والد نے بتایا کہ تاحال پولیس کی جانب سے کوئی کارروائی نہیں کی گی نہ ہی بچے کو بازیاب کرایا گیا۔عدالت نے تفتیشی افسر کو بچے کی بازیابی کے لئے کارروائی جاری رکھنے کا حکم دیتے ہوئے 26 جون کو پیش رفت رپورٹ طلب کرلی۔