د لاس گل ویلفیئر پروگرام بچوں کی جبری مشقت کیخلاف عملاً میدان میں کام کر رہی ہے

د لاس گل ویلفیئر پروگرام بچوں کی جبری مشقت کیخلاف عملاً میدان میں کام کر رہی ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

نوشہرہ(بیورورپورٹ) سابق صوبائی وزیر اور دلاس گل ویلفیئر پروگرام کی چیئرپرسن معراج ہمایون خان نے کہا ہے کہ د لاس گل ویلفیئر پروگرام نہ صرف خیبرپختونخواہ میں بلکہ پاکستان بھر میں بچوں کی جبری مشقت کے خلاف ہیں اور سال 1992سے باضابط طور پر بچوں کی جبری مشقت کے خلاف عملاً میدان میں کام کر رہی ہے جس کی واضع دلیل یہ ہے کہ گزشتہ کئی سالوں سے بھٹہ خشت،ورکشاپوں،ہوٹلوں اور سڑکوں سمیت مقامی سطح پر دکانوں یا چھوٹے چھوٹے کارخانوں میں کام کرنے والے بچوں کو زیور تعلیم سے آراستہ کرکے انکو معاشرے کے مفید اور کارآمد انسان بنا دیئے ہیں ان خیالات کا اظہار انہوں نے انٹرنیشنل لیبر ڈے کے حوالے سے ایک اخباری بیان میں کیا ہے،محترمہ معراج ہمایون خان نے مزید کہا کہ ہمیں اس دن کے مناسبت سے یہ عہد کرنا ہوگا کہ ہم جبری مشقت یا ان بچوں جو کسی وجہ سے تعلیم چھوڑ کر محنت مزدوری کرتے ہیں انکی تحفظ کیلیے کی گئی ناقابلِ یقین پیش رفت پر غور کریں اور 18سال سے کم عمر کے بچوں کیلیے خطرناک چائلڈ لیبر پر پابندی کی روشنی میں ایسے تمام بچوں کے مستقبل کی حفاظت کے لیے یکجا ہوجائیں اور اس بات کو یقینی بنائیں کہ چائلڈ لیبر کے شکار بچے بھی زیور تعلیم سے آراستہ ہو اور انہیں بھی ترقی کے سفر میں شامل کرتے ہوئے وہ بھی ترقی کے منازل طے کرسکے۔