میپکو:واجبات کی عدم ادائیگی پرسرکاری اداروں کا گھیراؤ

  میپکو:واجبات کی عدم ادائیگی پرسرکاری اداروں کا گھیراؤ

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

ملتان (نیوزرپورٹر)ملتان الیکٹرک پاورکمپنی (میپکو)ملتان سرکل انتظامیہ نے 6ارب 39 کروڑ روپے سے زائد واجبات کی عدم ادائیگی پر سرکاری وفاقی و صوبائی اداروں /محکموں کے کنکشنز منقطع کرنے کے احکامات جاری کردئیے ہیں۔ سپریٹنڈنگ انجینئر میپکو ملتان سرکل امجد نواز بھٹی نے تمام ڈویژنوں کے ایگزیکٹو انجینئرز اور ریونیو آفیسرز کو ہدایت کی ہے کہ واجب الادا بجلی بل وصول کرنے کے لئے تمام نادہندہ سرکاری محکموں کو نوٹسز جاری کئے جائیں اور ان کے سربراہان سے رابطہ کیاجائے۔ مقررہ تاریخ تک جون 2024 تک بقایاجات، واجبات اور(بقیہ نمبر22صفحہ7پر)

 رننگ بلز وصول کئے جائیں۔ بلوں کی عدم ادائیگی پر کنکشنز بغیر کسی رعایت کے منقطع کئے جائیں۔ملتان سرکل کے زیر انتظام علاقوں میں صوبائی محکموں نے 6ارب روپے سے زائد اور وفاقی اداروں نے 32کروڑ42لاکھ روپے اداکرنے ہیں۔ ملتان سرکل کے نادہندہ سرکاری اداروں /محکموں میں واسا 4ارب 41کروڑ51لاکھ روپے واجبات کے ساتھ کمپنی کا سب سے بڑا ڈیفالٹر ہے۔ صوبائی حکومت کے ماتحت اداروں میں ٹی ایم ایز کے ذمہ 74کروڑ37لاکھ روپے، پی ایچ ای نے 36کروڑ13لاکھ روپے، سٹی ڈسٹرکٹ گورنمنٹ ملتان نے 9کروڑ57لاکھ روپے، پنجاب ہائی وے 3کروڑ روپے، محکمہ پولیس نے 10لاکھ59ہزارروپے، محکمہ جیل خانہ جات نے ایک کروڑ 43لاکھ روپے، محکمہ زراعت نے 4لاکھ81ہزارروپے،محکمہ خوراک نے 19لاکھ70ہزارروپے، محکمہ ایری گیشن نے ایک کروڑ39لاکھ روپے، محکمہ صحت نے 3کروڑ11لاکھ روپے، ایم ڈی اے نے 45لاکھ92ہزارروپے، بہا الدین زکریا یونیورسٹی نے 2کروڑ78لاکھ روپے، نشتر ہسپتال نے 5کروڑ 13 لاکھ روپے، چلڈرن کمپلیکس نے 33لاکھ21ہزارروپے اور دیگر محکموں نے 25کروڑ17لاکھ روپے کی ادائیگی کرنی ہے۔ وفاقی محکموں /اداروں میں موٹر وے پولیس 3 لاکھ13ہزارروپے، موٹر وے پٹرولنگ پولیس 3لاکھ59ہزارروپے، محکمہ ریلوے 3کروڑ17لاکھ روپے، وزارت قانون 53لاکھ26ہزارروپے، محکمہ خوراک و لائیوسٹاک 9لاکھ53ہزارروپے، محکمہ انکم ٹیکس 28لاکھ روپے، محکمہ ڈاک 2لاکھ روپے، اٹامک انرجی کمیشن 19لاکھ 41ہزارروپے، سول ایوی ایشن 2کروڑروپے، سوئی نادرن گیس 38لاکھ47ہزارروپے، سٹیٹ لائف انشورنس 7لاکھ60ہزارروپے، پاکستان براڈکاسٹنگ 38لاکھ66ہزارروپے، پی ٹی وی 22لاکھ80ہزارروپے، نیشنل بینک 20لاکھ76ہزارروپے، نیشنل ہائی وے اتھارٹی 55لاکھ77ہزارروپے، پاک ٹیلی کام سروس 71لاکھ51ہزارروپے، کنٹونمنٹ بورڈ ملتان 4کروڑ55لاکھ روپے اور دیگر ادارے 3کروڑ21لاکھ روپے واجبات ہیں۔[10:08 PM,