فوڈ اتھارٹی ٹیمیں سرگرم،ملاوٹی دودھ،ایکسپائرڈ اشیاء تلف

فوڈ اتھارٹی ٹیمیں سرگرم،ملاوٹی دودھ،ایکسپائرڈ اشیاء تلف

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

ملتان،ڈیرہ غازیخان، لودھراں (نیوزرپورٹر، بیورورپورٹ، نمائندہ پاکستان) سورج کند روڈ پر میٹ شاپ کو بدبودار گوشت سٹور کرنے، ورکرز کے میڈیکلز سرٹیفکیٹس کی عدم موجودگی ہونے اور مکڑیوں کے جالے پائے جانے پر 30 ہزار روپے جرمانہ کیا گیا۔ اسی طرح(بقیہ نمبر9صفحہ7پر)

 رائل آرچرڈ اور نواب پور روڈ پر دودھ میں فیٹ اور قدرتی غذائیت کی کمی پائے جانے، دودھ میں پانی کی بھی ملاوٹ ثابت ہونے پر 2 ملک شاپس کو 15،15 ہزار روپے کے جرمانے عائد کیے گئے۔ اس کے علاہ وہاڑی روڈ چونگی نمبر 22 میں بیکری کو بیکری آئٹمز پر کوئی لیبلنگ نہ کرنے، آئل کی تبدیلی کا کوئی ریکارڈ موجود نہ ہونے پر 20 ہزار جبکہ شجاع آباد میں ہوٹل کو ایکسپائری مصالحہ جات کا استعمال کرنے، صفائی کے ناقص انتظامات ہونے پر 15 ہزار روپے جرمانہ کر دیا گیا۔ مزید کبیر والا میں آئس بلاکس میں مردہ حشرات پائے جانے، فلٹر کی تبدیلی کا کوئی ریکارڈ موجود نہ ہونے پر آئس فیکٹری کو 15 ہزار روپے جرمانہ کیا گیا۔ مزید برآں بورے والا میں ڈسٹریبیوٹر یونٹ کو ایکسپائرڈ خوراک فروخت کرنے، خریدوفروخت کا کوئی ریکارڈ موجود نہ ہونے پر 35 ہزار روپے جرمانہ کیا گیا۔ علاہ ازیں میلسی میں 2 بیوریجز یونٹس کو غیر معیاری سوڈا واٹر تیار کرنے، دوسرے برانڈز کی بوتلیں استعمال کرنے اور پانی کی تجزیہ رپورٹ موجود نہ ہونے پر 10، 10 ہزار روپے کے جرمانے عائد کر دیے گئے۔اڈہ مسا کوٹھا، قادر پور چمنا اور پل نہر کہروڑ پکا میں 3 ملک شاپس کو مجموعی طور پر 21 ہزار روپے کے جرمانے عائد کردیے۔ اسی طرح ریلوے روڈ دنیاپور میں 2 پولٹری اینڈ میٹ شاپس کو ورکرز کی ذاتی صفائی نہ ہونے، سلاٹرنگ کونز کا استعمال نہ کرنے اور گوشت کی صفائی کیلئے آلودہ پانی کا استعمال کرنے پر 7000 روپے کے جرمانے عائد کیے۔ اس کے علاہ ریلوے روڈ دنیا پور اور چاہ مسیتاں والی کہروڑ پکا میں 2 سوڈا واٹر فیکٹریوں کو واشنگ ایریا میں گندگی اور حشرات کی بھرمار پر 16 ہزار روپے کے جرمانے کیے گئے۔ مزید غلہ منڈی میں ویئر ہاس اور اڈہ پرمٹ پر ہوٹل اور حسن والا چونگی نمبر 2 پر واقع بیکری کو صفائی کے انتہائی ناقص انتظامات، سٹوریج کیلیے کیمیکل ڈرمز کا استعمال اور خوراک کو ڈھانپ کر نہ رکھنے پر 24 ہزار روپے کے جرمانے عائد کیے گئے۔ پنجاب فوڈ اتھارٹی فوڈ سیفٹی ٹیموں کی ڈی جی خان، مظفر گڑھ، راجن پور میں ملک شاپس،آئس فیکٹریز، مینوفیکچرنگ یونٹ کی چیکنگ،معیار بہتر نہ ہونے پر بھاری  جرمانے عائد،100 لٹر حشرات زدہ پانی،70 لٹر ملاوٹی دودھ،11 کلو ایکسپائرڈ اشیاء تلف، فوڈ سیفٹی ٹیم نے مسلم ٹاؤن ڈی جی خان میں واقع مینوفیکچرنگ یونٹ کو مشروبات کی تیاری میں مصنوعی مٹھاس کا استعمال کرنے پر 25 ہزار جبکہ کوٹ چٹھہ میں آئس فیکٹری کو پانی کی تجزیہ رپورٹ نہ ہونے پر 10 ہزارروپے جرمانہ عائد کردیا گیا۔اسی طرح علی پور مظفرگڑھ میں معروف ریسٹورنٹ کو کھانوں کی تیاری میں ممنوعہ چائنہ سالٹ کا استعمال کرنے پر 30 ہزارروپے جرمانہ کیا گیا۔اس کے علاوہ ریلوے روڈ کوٹ ادو مظفرگڑھ میں ملک شاپ کو صفائی کے انتہائی ناقص انتظامات پر جبکہ داری روڈ پر کریانہ سٹور کو ایکسپائرڈ بسکٹ فروخت کرنے پر یکساں 14 ہزارروپے اور پوسٹ آفس کے قریب آئس فیکٹری کو آئس بلاکس میں مردہ مکھیاں پائے جانے پر 15 ہزارروپے جرمانہ عائد کردیا گیا۔مزید ہدایت روڈ راجن پور میں سویٹس اینڈ بیکرز یونٹ کو خوراک کی تیاری میں ناقابلِ سراغ اجزاء،ملاوٹی مصالحوں کا استعمال کرنے پر 20 جبکہ عمر کوٹ روڈ راجن پور میں ملک شاپ کو دودھ کی خریدوفروخت کا کوئی ریکارڈ واضح نہ کرنے پر 10 ہزارروپے جرمانہ کیا گیا۔