سمگلنگ نے ملک کو معاشی واوقتصادی طور پر غیر معمولی نقصان پہنچایا ہے‘ شیخ عبدالمنان

سمگلنگ نے ملک کو معاشی واوقتصادی طور پر غیر معمولی نقصان پہنچایا ہے‘ شیخ ...

لاہور(کامرس رپورٹر)پاکستان ہارڈ وئیر ایسو سی ایشن کی ایف بی آر و کسٹم کمیٹی کے چیر مین شیخ عبدالمنان نے کہا ہے کہ سمگلنگ نے ملک کو معاشی واوقتصادی طور پر غیر معمولی نقصان پہنچایا ہے ۔سمگلنگ کی وجہ سے قومی خزانے کو نہ صرف سالانہ اربوں روپے کا نقصان ہو رہا ہے بلکہ ایمانداری سے ٹیکس ادا کرنے والوں کی حوصلہ شکنی کر رہا ہے ، ان خیالات کا اظہار انہوں نے مقامی ہوٹل میں میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہو ئے کیا ، انہوں نے کہا کہ سمگلنگ سے ملکی معیشت کو 22بلین روپے سالانہ نقصان کا سامنا ہے جبکہ پیٹرولیم مصنوعات ، آٹو پارٹس ، بیرنگ ، ہارڈ وئیر مصنوعات کاسمیٹکس، کپڑے ، دوائیاں ، جو سز ، ٹائلز وغیرہ کافی مقدار میں سمگل ہو رہے ہیں جس سے مقامی انڈسٹری کو ناقابل تلافی نقصان پہنچ رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ آئل ، آٹو پارٹس، الیکٹرونکس ، پیٹرولیم مصنوعات، ودیگر مصنوعات پاک افغان اور پاک ایران بارڈر کے ایجنٹس کے ذ ریعے سمگل ہو رہی ہیں سمگلرملکی معیشت کو بھاری نقصان پہنچارہے ہیں ۔ شیخ عبدالمنان نے کہا کہ ملکی مارکیٹ میں کی مہنگائی کی وجہ سے اور در آمدات پر ٹیکس لگنے کی وجہ سے اشیاء مہنگی ہو رہی ہیں جبکہ ایران اور افغانستان سے سمگل شدہ مختلف مصنوعات سستے داموں دستیاب ہیں۔

انہوں نے کہا کہ سمگل شدہ ہونڈا کاریں ما رکیٹ سے تقریبأ نصف ریٹ پر دستیاب ہیں ۔ کاسمیٹکس ، جیولری ، ادویات وغیرہ بھارت سے براستہ دبئی ، افغانستان اور پھر پاکستان منگوائی جاتی ہیں ۔ چین ، ایران ، اور دیگر ممالک سے ٹائلز کی سمگلنگ اور مس ڈیکلیر یشن کی لعنت نے مقامی انڈسٹری کو تباہی کے دھانے پر پہنچا دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ گورنمنٹ کی سکیم بھی سمگلنگ روکنے میں مکمل طور پر ناکام رہی ہے کمیٹی کے چیرمین نے کہا کہ حکومت سمگلنگ روکنے کے لئے سنجیدگی اختیار کرے اور لانگ ٹرم پالیسی ترتیب دے ۔ نیز کسٹم ڈیوٹی کی شرح میں کمی کرکے سمگلنگ کی حوصلہ شکنی کی جائے ۔کسٹم ڈیوٹی میں کمی کرکے تاجروں کو ریلیف دیا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ سمگلنگ کا مال امپورٹ ڈیوٹی ادا کرنے والوں کے مقابلے میں سستا ہو تا ہے جسکی وجہ سے ایمانداری سے ٹیکس ادا کرنے والوں کو بھاری نقصان ہو رہا ہے ، انہوں نے کہا کہ پہلے تو امپورٹ پر کروڑوں روپے ڈیوٹی ادا کی جاتی ہے اسکے بعد مارکیٹ میں قیمت زیادہ ہونے سے مال نہیں بکتا ، انہوں نے خبردار کیا کہ حکومت فوری طور پر اس پر قابو پائے ورنہ دیانت داری سے ٹیکس دینے والے بھی غیر قانونی راستہ اختیار کریں گے، جس سے حکومت کے ریونیو میں مزید کمی ہو جائے گی۔

مزید : کامرس