میرے والد کے قتل کے بعد ہر کوئی خوفزدہ ہے، روسی اپوزیشن رہنما بورس نیمتسوف کی بیٹی کا بیان

میرے والد کے قتل کے بعد ہر کوئی خوفزدہ ہے، روسی اپوزیشن رہنما بورس نیمتسوف کی ...

 ماسکو (اے پی پی) روس کی حزب اختلاف کے مقتول رہنما بورس نیمتسوف کی بیٹی ژانا نیمتسوف نے کہا ہے کہ ان کے والد کے قتل کے سیاسی لحاظ سے ذمہ دار روس کے صدر ولادی میر پیوٹن ہیں کیونکہ ان کے والد کی لڑائی صرف صدر پیوٹن سے تھی کسی اور سے نہیں۔ عالمی میڈیا کے مطابق بورس کی بیٹی ژانا نے کہا کہ ان کے والد روسی حزب اختلاف کے ایک طاقتور رہنما تھے اور وہ صدر پیوٹن کے سب سے بڑے ناقد تھے۔ ژانا نیمتسوف نے مزید کہا کہ ابھی تک کسی اہلکار نے ان کے والد کے قتل کے سلسلہ میں ان سے رابطہ نہیں کیا۔ انہوں نے کہا کہ بورس کے قتل کے بعد سے روس میں حزب اختلاف کا کردار ختم کردیا گیا ہے اور اب ہر کوئی خوفزدہ ہے۔واضح رہے کہ صدر پیوٹن نے بورس کے قتل کی سخت مذمت کی تھی لیکن مقتول کی بیٹی نے اپنے والد کے قتل پر صدر پیوٹن پر ہی انگلی اٹھائی ہے اورانہیں سیاسی طور پر اس قتل کا ذمہ دار قرار دیا ہے۔

مزید : عالمی منظر