قومی اداروں کی بلدیاتی انتخابات کیلئے بیلٹ پیپرز مقررہ مدت میں چھاپنے سے معذرت

قومی اداروں کی بلدیاتی انتخابات کیلئے بیلٹ پیپرز مقررہ مدت میں چھاپنے سے ...

اسلام آباد (خصو صی رپورٹ)بلدیاتی انتخابات کے لئے بیلٹ پیپرز کی چھپائی کا معاملہ الیکشن کمیشن کے لئے مسئلہ بن گیا۔ تینوں قومی اداروں نے بیلٹ پیپرز مقررہ مدت میں چھاپنے سے معذرت کرلی۔ سیکرٹری الیکشن کمشن کا کہنا ہے کہ تینوں ادارے 25 روز میں 11 کروڑ بیلٹ پیپرز چھاپنے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔ بقیہ 39 کروڑ بیلٹ پیپرز کی چھپائی کیلئے کوششیں جاری ہیں۔ تفصیلا ت کے مطا بق پرنٹنگ کارپوریشن آف پاکستان، سیکورٹی پرنٹنگ کارپوریشن اور پوسٹ آفس فاؤنڈیشن نے مقررہ 25 روز میں 50 کروڑ بیلٹ پیپرز چھاپنے سے معذرت کی ہے۔ تینوں ادارے 25 روز میں صرف 11 کروڑ بیلٹ پیپرز کی چھاپنے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔ خیبر پختونخوا کے لئے 8 کروڑ، پنجاب اور سندھ کے لئے 40 سے 42 کروڑ جبکہ اسلام آباد اور کنٹونمنٹ کے لئے 50 لاکھ بیلٹ پیپرز درکار ہیں۔ میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے قائم مقام سیکریٹری الیکشن کمیشن شیر افگن کا کہنا تھا کہ پنجاب اور سندھ کے 64 ہزار وارڈز میں بلدیاتی انتخابات ہوں گے۔ بلدیاتی انتخابات کا شیڈول 28 جولائی کو جاری کیا جائے گا جبکہ امیدواروں کی حتمی فہرست 24 اگست کو آویزاں کی جائے گی۔ سیکریٹری الیکشن کمیشن کے مطابق سیکیورٹی پرنٹنگ کارپوریشن نے ایک دن میں 6 لاکھ، پرنٹنگ کارپوریشن آف پاکستان نے 25 روز میں ساڑھے سات کروڑ جبکہ پوسٹ آفس فاونڈیشن نے 2 کروڑ بیلٹ پیپرز چھاپنے کی یقین دہانی کرائی ہے۔ باقی 39 کروڑ بیلٹ پیپرز پرائیویٹ پرنٹنگ کمپنیوں سے چھپوانے پر غور کیا جا رہا ہے۔ سیکریٹری کابینہ اور پرنٹنگ کارپوریشن آف پاکستان کو پرنٹنگ مشینری کو جدید طرز پراپ گریڈ کرنے کا کہہ دیا ہے

مزید : صفحہ اول