بورڈ آف ریونیو کے زیر نگرانی جھنگ کی کمپیوٹر سنٹر انتظامیہ اور وکلاء میں جھگڑا

بورڈ آف ریونیو کے زیر نگرانی جھنگ کی کمپیوٹر سنٹر انتظامیہ اور وکلاء میں ...

 لاہور(عامر بٹ سے)بورڈ آف ریونیو کے زیر نگرانی ضلع جھنگ میں قائم کئے جانے والے کمپیوٹر سروس سنٹر میں نوجوان وکلاء کا کمپیوٹرسروس سنٹر انتظامیہ کے ساتھ تصادم،بدتمیزی اور ہاتھا پائی سے شروع ہونے والی لڑائی شدت اختیار کر گئی،سروس سنٹر انچارج کا سر پھٹ گیا ،خواتین سٹاف کے ساتھ بدتمیزی ،دیگر سٹاف کو دھکے دے کرباہر نکال دیا گیا،اطلاع ملنے پر ڈی سی او جھنگ ،ڈی پی او اورمحکمہ ریونیو کے دیگر افسران موقع پر پہنچ گئے ،دہشت گردی کے ساتھ دیگر دفعات کے تحت وکلاء کے خلاف مقامی تھانہ کوتوالی میں مقدمہ درج کر لیا ہے پاکستان کوملنے والی اطلاعا ت کے مطابق بورڈ آف ریونیو کے زیر نگرانی ضلع جھنگ میں چلنے والے کمپیوٹر سروس سنٹر میں گزشتہ روز نوجوان وکلاء جن میں تقی شاہ اورعمار شاہ کمپیوٹر سروس سنٹر میں آئے اور فرد برائے ملکیت کے حصول کا مطالبہ کیا جس پر ایس ای او نے انہیں لائن میں کھڑے ہوکر پرچی ٹوکن لینے کی ہدائت کی جس پروکلاء اور سروس انچارج کے درمیان بحث شروع ہوگئی جو کہ تو تومیں میں سے بڑھ کر لڑائی جھگڑے تک پہنچ گئی جس کے نتیجے میں نوجوان وکلاء کی کثیر تعدادنے کمپیوٹر سروس سنٹر پر دھاوہ بول دیا اور سروس سنٹر انچارج عاشر سمیت دیگر ہمراہ سٹاف پر بھی تشدد کیا گیا،ذرائع کے مطابق تقی شاہ اور عمار شاہ نامی وکلاء نے سروس سنٹر انچارج سے ایسے موضع کی کمپیوٹرائزڈ فرد طلب کررہا تھے جو کہ ابھی آن لائن ہی نہیں ہوا تھا،سروس سنٹر انچارج اس فرد کو جاری کو جاری کرنے سے انکاری تھا جس پر نوجوان وکیل نے کمپیوٹر سروس سنٹرمیں ہنگامہ برپا کردیا کرسیاں ٹیبل الٹا دیئے،کیبن کے شیشے توڑ دیئے ،سروس سنٹر انچارج عاشر حمید پر بھاری ضرب کا وار کیا جس کے نتیجے میں سروس سنٹر انچارج کا سر پھٹ گیا،جس کے بعد کمپیوٹر سروس سنٹر میں سٹاف خواتین کو بھی گالیاں اور دھکے دے کر سنٹر سے باہر نکال دیا گیااور سامنے آنے والے مرد سٹاف پر بھی تشدد کیا،جس کے باعث 3ایس ای او سمیت 6افراد زخمی ہو گئے،جبکہ باقی سٹاف نے بھاگ کر اپنی جان بچائی،وکلاء گردی کی اطلاع ملتے ہی ڈی سی او جھنگ نادر چٹھہ ڈی پی او کے ہمراہ موقع پر پہنچ گئے ،ایڈیشنل ڈسٹرکٹ کلکٹر سمیت ریونیو کے دیگر افسران بھی موقع پر پہنچ گئے اور اس واقع کو افسوسناک قرار دے دیاجبکہ وکلاء گردی کے وقوعہ کے خلاف سروس سنٹر انچارج عاشر حمید سیال کی مدعیت میں دہشت گردی کے ساتھ دیگر دفعات کے تحت مقامی تھانہ کوتوالی جھنگ میں مقدمہ درج کر لیا گیا جن میں تقی شاہ،خضر سلطان ،رانا گوہر ،طاہر بلوچ،صغیر عباس،آفتاب سیال،صاحب جہاں سمیت دیگر نامعلوم وکلاء کو نامزد کیا گیا ،ڈی سی او جھنگ نادر چٹھہ کا کہنا ہے کہ واقعہ کی تحقیقات ہو نگی اور ذمہ داران کے خلاف قانونی کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔

مزید : صفحہ آخر