کوئٹہ میں بچیوں کا ایک صدی پرانا سکول بند کردیا گیا

کوئٹہ میں بچیوں کا ایک صدی پرانا سکول بند کردیا گیا
کوئٹہ میں بچیوں کا ایک صدی پرانا سکول بند کردیا گیا

  


اسلام آباد (ویب ڈیسک) بلوچستان میں تعلیم سے محبت اور سکولز کی تعداد میں اضافے کی دعویدار صوبائی حکومت نے کوئٹہ میں واقع 1945ءمیں قیام پاکستان سے قبل قائم پرائمری سکول کو سردیوں کی تعطیلات میں ایجوکیشن آفس میں تبدیل کردیا تھا۔ اب یہاں بلیک بورڈ تو ہے مگر بچوں کے سبق یاد کرنے کی آوازیں نہیں۔ اساتذہ کا کہنا ہے کہ بچوں کی تعداد تقریباً پانچ سو تھی تاہم حکومت 170 قرار دیتی ہے۔ سکول کا راتوں رات سرکاری دفتر میں تبدیل ہوجانے پر جہاں بلوچستان ہائیکورٹ نے نوٹس لیا وہیں صوبائی اسمبلی میں بھی بحث ہوتی رہی۔ ماہرین تعلیم کا موقف ہے کہ وزیراعلیٰ نے ایک کمیٹی تشکیل دینے کا اعلان تو کیا ہے تاہم اس کا کوئی جواب نہیں کہ ایمرجنسی بنیادوں پر شفٹنگ کیوں کی گئی۔

مزید : اسلام آباد