دبئی میں پاکستانیوں سمیت سینکڑوں غیرملکی ملازمین کمپنی کے جبر کا شکار ،دل دہلا دینے والے حالات

دبئی میں پاکستانیوں سمیت سینکڑوں غیرملکی ملازمین کمپنی کے جبر کا شکار ،دل ...
دبئی میں پاکستانیوں سمیت سینکڑوں غیرملکی ملازمین کمپنی کے جبر کا شکار ،دل دہلا دینے والے حالات

  

دبئی سٹی (مانیٹرنگ ڈیسک) اپنا وطن چھوڑ کر روزی کمانے کے لئے بیرون وطن جانے والے بڑے سہانے خواب لے کر دیار غیر پہنچتے ہیں لیکن اکثر اوقات اغیار کی بے حسی ان کے خواب چکنا چور کردیتی ہے۔ متحدہ عرب امارات میں 100 سے زائد غیر ملکیوں کی ملازمتیں ختم کرنے کے بعد انہیں جن دردناک حالات میں رکھا گیا ہے وہ اسی بے حسی کی منہ بولتی تصویر ہیں۔ یہ ملازمین ایک بڑی الیکٹرومکینیکل کمپنی میں کام کرتے تھے جس کے دیوالیہ ہونے پر ان کی بدقسمتی کا آغاز ہوگیا۔ 190کے قریب ملازمین رقم خالی جیب کے ساتھ کھانے پینے اور حتیٰ کہ پانی کی سہولت سے بھی محروم کرکے سونا پور کے علاقے میں بے یارومددگار چھوڑ دئیے گئے۔

مر دکیا کم تھے،اب افریقی ملک میں بندروں کی درندگی،خواتین کا جینا محال کر دیا

 نیوز ویب سائٹ ”خلیج ٹائمز“ کے مطابق ان مظلومین میں سے تقریباً 30 لوگ کسی نہ کسی طرح اپنے وطن روانہ ہوگئے لیکن تقریباً 160 لوگ وہیں پھنسے رہے۔ گزشتہ سال نومبر میں ایک عدالتی فیصلے میں ان میں سے ہر شخص کو 9ہزار 142درہم اور واپسی کا ٹکٹ دینے کا حکم دیا گیا۔ محض چند افراد کو ہی عدالتی حکم کے مطابق ادائیگی کی گئی جبکہ 100 سے زائد افراد ابھی بھی دلخراش حالات میں زندہ رہنے پر مجبور ہیں۔ کئی مہینوں سے نہ انہیں کوئی مدد ملی ہے ، نہ ان کے پاس کھانے پینے کا بندوبست ہے اور نہ ہی یہ اپنے خاندان اور بچوں کے لئے کچھ بھیجنے کی استطاعت رکھتے ہیں۔ ان بے سہارا مظلوموں کا تعلق بھارت، بنگلہ دیش، نیپال اور پاکستان جیسے ممالک سے ہے اور یہ عدالتی حکم کے بعد تاحال اس پر عمل درآمد کے منتظر ہیں۔

مزید : بین الاقوامی