’’تم میرے پاکستان چلو، وہاں شادی کر لیں گے۔۔۔‘‘ یورپی ملک میں پاکستانی شہری نے ایک ایسی لڑکی کو پیشکش کر دی کہ پولیس نے فوری گرفتار کر لیا، اب پوری عمر پچھتانا پڑے گا کیونکہ۔۔

’’تم میرے پاکستان چلو، وہاں شادی کر لیں گے۔۔۔‘‘ یورپی ملک میں پاکستانی ...
’’تم میرے پاکستان چلو، وہاں شادی کر لیں گے۔۔۔‘‘ یورپی ملک میں پاکستانی شہری نے ایک ایسی لڑکی کو پیشکش کر دی کہ پولیس نے فوری گرفتار کر لیا، اب پوری عمر پچھتانا پڑے گا کیونکہ۔۔

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) جرم پیشہ افراد بیرون ملک جا کر بھی اپنے کرتوتوں سے باز نہیں آتے اوراپنے ساتھ اپنے ملک کا نام بھی بدنام کرتے ہیں۔ ایسے ہی ایک پاکستانی شخص نے برطانیہ میں ایسی غیرانسانی حرکت کر دی ہے کہ جان کر ہر پاکستانی پشیمان ہوگا۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق 53سالہ اختر حسین نامی اس ہوس زادے نے فیملی کے ساتھ پولینڈ سے برطانیہ آئی 13سالہ لڑکی کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔ اس نے لڑکی کو شادی کی پیشکش کرتے ہوئے اپنے ساتھ فرار ہو کر پاکستان آنے کو بھی کہا اور کہا کہ وہ اس کے ساتھ شادی کرنے کے بعد اپنی پہلے بیوی بچوں کو چھوڑ دے گا۔

مزیدپڑھیں:امریکی ویڈ یو بلاگر کرسٹینا نے سعودی بچے ابو سین کے بعد پاکستانی بیٹر ی والے سے بات چیت شروع کردی ،ویڈیو نے سوشل میڈ یا پر دھوم مچادی

رپورٹ کے مطابق اس شخص نے کم سن لڑکی کو ورغلا کر دو ہفتے تک اپنے ساتھ اپنے کرائے کے کمرے میں رکھا۔ اس دوران لڑکی کے والدین نے اس کی گمشدگی کی رپورٹ درج کروا دی اور پولیس لڑکی کو تلاش کرتے ہوئے اس تک پہنچ گئی۔ ملزم کو گرفتار کرکے بریڈفورڈ کراؤن کورٹ میں پیش کر دیا گیا جہاں سے اسے ساڑھے 4سال قید کی سزا سنا دی گئی ہے۔رپورٹ کے مطابق لڑکی چند ماہ قبل ہی اپنے خاندان کے ہمراہ پولینڈ سے برطانیہ منتقل ہوئی تھی اور یہ خاندان ملزم کی رہائش سے کچھ ہی فاصلے پر مقیم تھا۔

مزید :

بین الاقوامی -