سائنسی عمل سے آم کی برآمد میں غیر معمولی اضافہ کیا جائیگا،سیکرٹری زراعت

سائنسی عمل سے آم کی برآمد میں غیر معمولی اضافہ کیا جائیگا،سیکرٹری زراعت

  

لاہور (این این آئی)سیکرٹری زراعت پنجاب محمد محمود نے کہا ہے کہ کاشتکاروں کو سائنسی بنیادوں پر برداشت کا عمل سکھا کر آم کی برآمد میں غیر معمولی اضافہ کیا جائیگا۔ ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ چونسا آم کی برآمد میں اضافے کیلئے پنجاب حکومت اور نیسلے پرائیویٹ لمیٹڈ کے اشتراک کیلئے دو معاہدوں پر دستخط ہوچکے ہیں، انہوں نے کہا کہ معاہدے کے تحت نیسلے پرائیویٹ لمیٹڈ آم کے باغبانوں کو چونسا آم کی پیداوار بڑھانے اور سائنسی طریقوں سے پھل کی برداشت کو یقینی بنانے کیلئے تربیت فراہم کرے گا۔ چونسا پراجیکٹ کیلئے نیسلے پاکستان کو مینگو ریسرچ انسٹی ٹیوٹ ملتان کا تعاون بطور ریسرچ پارٹنر میسر ہوگا۔ پراجیکٹ میں آم پر کی گئی جدید تحقیق کی روشنی میں آم کے باغبانوں کیلئے بہترین لائحہ عمل تیار کیا جائیگا۔ اس طرح کی ایک کوشش پانی کے باکفایت استعمال کے حوالے سے بھی کی جا رہی ہے۔ اس کیلئے محکمہ زراعت کے شعبہ اصلاح آبپاشی سے 60فیصد سبسڈی پر ڈرپ نظام آبپاشی اور پانی کی بچت کے دیگر طریقوں پر عمل کرنیوالوں کو سبسڈی فراہم کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ کاشتکار کو دی جانیوالی سبسڈی میں نیسلے کا حصہ 40فیصد ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ ابتدائی طور پر یہ پائلٹ پراجیکٹ ضلع شیخوپورہ میں 10ایکڑ پرشروع ہوگا جسے 2017کے آخر تک 50ایکڑ تک وسعت دی جا سکے گی۔انہوں نے کہا کہ 90فیصد سے زائد دستیاب پانی زرعی مقاصد کیلئے استعمال ہوتا ہے۔ ضرورت اس امر کی ہے کہ پانی کے باکفایت استعمال کیلئے کاشتکاروں کو فنی تربیت اور رہنمائی کے ساتھ ان کی حوصلہ افزائی کی جائے۔

مزید :

کامرس -