شام ‘ داعش کے زیرتسلط علاقوں سے 300 خاندان فرار

شام ‘ داعش کے زیرتسلط علاقوں سے 300 خاندان فرار

  

بیروت/دمشق(آئی این پی)شام میں دولت اسلامیہ (داعش )کے زیرتسلط شہر الرقہ میں 300 خاندان فرار ہوگئے ، سیرین ڈیموکریٹک فورسز کی طرف سے جاری آپریشن کے نتیجے میں شدت پسند گروپ کو شدید مشکلات کا سامنا ہے۔غیرملکی میڈیا کے مطابق الرقہ سے 300 خاندان محفوظ مقامات پر منتقل ہونے کے لیے الرقہ سے نکل چکے ہیں۔شام میں انسانی حقوق کی صورت حال پر نظر رکھنے والے اداریسیرین آبزرویٹری فار ہیومن رائٹس کی طرف جاری کردہ اطلاعات میں بتایا گیا ہے کہ الرقہ سے 300 خاندانوں نے نقل مکانی کی ہے۔ ان میں داعش سے وابستہ جنگجوں اور غیرملکی جنگجوں کے خاندان بھی شامل ہیں۔بیان میں کہا گیا ہے کہ الرقہ سے فرار کے بعد یہ لوگ مشرقی شام کے شہر دیر الزور اور جنوب مغرب میں حما کی طرف روانہ ہو رہے ہیں۔خیال رہے کہ امریکا، عرب کمیونٹی اور کردوں کی حمایت یافتہ عسکری گروپ سیرین ڈیموکریٹک فورسز نے گذشتہ برس نومبر میں امریکی مدد کے ساتھ الرقہ میں داعش کے خلاف آپریشن شروع کیا تھا۔ڈیموکریٹک فورسز الرقہ کے شمال، مغرب اور مشرق کی سمت میں داعش کی سپلائی لائن کاٹنے میں کامیاب ہونے کے ساتھ ساتھ داعش سے کئی اہم علاقے واپس لینے میں بھی کامیاب ہوگئی ہے۔ ڈیموکریٹک فورس کے جنگجو اس وقت الرقہ کے شمال مشرق میں داعش کے مرکز سے صرف 8 کلو میٹر کی دوری پر ہیں۔

مزید :

عالمی منظر -