امریکی ڈرون حملے، آپریشنز، افغانستان میں داعش، طالبان کے 93شدت پسند ہلاک، 7پاکستانی بھی مارنے کا دعوی

امریکی ڈرون حملے، آپریشنز، افغانستان میں داعش، طالبان کے 93شدت پسند ہلاک، ...

  

کابل(آئی این پی)افغانستان میں امریکی ڈرون حملوں اور سکیورٹی فورسز کے زمینی اور فضائی آپریشنز کے دوران مبینہ پاکستانی جنگجوؤں سمیت داعش اور طالبان کے 93شدت پسند ہلاک اور 66زخمی ہوگئے ، دہشتگردوں کی گاڑیوں اور اسلحہ کو بھی تباہ کردیا گیا۔ افغان میڈیا کے مطابق مشرقی صوبہ ننگرہار میں امریکی ڈرون حملوں میں داعش کے 16جنگجو ہلاک ہوگئے ۔صوبائی پولیس کمانڈنٹ نے اپنے بیان میں بتایا ہے کہ ڈرون حملو ں کا سلسلہ ہفتے کو شروع ہوا جو رات گئے تک جاری رہا جس کے نتیجے میں 16شدت پسند ہلاک ہوگئے۔ ان کا دعویٰ ہے کہ مرنے والوں میں7پاکستانی جنگجو شامل ہیں۔بیا ن میں کہا گیاہے کہ ڈرون حملوں کاسلسلہ صبح ساڑھے دس بجے شروع ہوا جہاں ضلع نازیان میں عسکریت پسندوں کو نشانہ بنایاگیا جس کے بعد تین بجے کے قریب ڈرون حملہ کیا گیا۔حملوں میں عسکریت پسندوں کا اسلحہ اور گولہ بارود تباہ ہوگیا۔ جنوبی صوبہ ہلمند میں افغان اور غیر ملکی فورسز کے فضائی آپریشن میں 31طالبان مارے گئے ۔صوبائی حکام کے میڈیا آفس سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ فضائی کارروائی صوبائی دارالحکومت لشکرگاہ،نادعلی اور گرامسر میں کی گئی ۔11عسکریت پسند اس وقت مارے گئے جب افغان فورسز نے انھیں لشکرگاہ کے علاقے بولان ماندوائی میں نشانہ بنایا اس دوران 3جنگجو زخمی بھی ہوئے ۔ضلع نادعلی میں آپریشن کے دوران 8طالبان جنگجو ہلاک اور 6دیگر زخمی ہوئے ۔صوبائی حکام کا کہنا ہے کہ آپریشن کے دوران نادعلی کے کئی علاقوں کو کلیئر کرالیا گیا ہے۔ دیسی دھماکہ خیز مواد کو تباہ کردیا گیا۔دوسری جانب صوبہ فرح میں افغان فورسز کی زمینی اور فضائی کاروائیوں میں 46طالبان جنگجو ہلاک اور57زخمی ہوگئے ۔صوبائی پولیس چیف عبدالمعروف فولاد کا کہنا ہے کہ آپریشن ضلع بالبولوک کے مختلف دیہات میں کیا گیا ۔فرح صوبے میں مسلح جنگجوؤں کو بھاری جانی نقصان اٹھانا پڑا انکی5 گاڑیوں اور اسلحہ کو بھی تباہ کردیا گیا ۔آپریشن کے دوران افغان نیشنل آرمی کا ایک اہلکار ہلاک اور2دیگر زخمی ہوگئے ۔

مزید :

صفحہ آخر -