برآمدات میں کمی ‘ درآمدات میں اضافہ ‘ تجارتی خسارہ 34 فیصد تک بڑھ گیا

برآمدات میں کمی ‘ درآمدات میں اضافہ ‘ تجارتی خسارہ 34 فیصد تک بڑھ گیا

  

ملتان( جنرل رپورٹر)برآمدات میں کمی اور درآمدات میں اضافے کے بعد پاکستان کا تجارتی خسارہ34فیصد تک بڑھ گیا ہے ‘رواں مالی سال کے 8ماہ کے دوران پاکستان کو اشیاء کی بیرونی تجارت میں20ارب20کروڑ ڈالر کے خسارے کا سامنا کرنا پڑا ‘گزشتہ سال اسی عرصے کے تجارتی خسارے کا حجم15ارب4کروڑ ڈالر تھا‘ ادارہ شماریات کے اعدادوشمار کے مطابق رواں (بقیہ نمبر37صفحہ12پر )

مالی سال جولائی سے فروری کے دوران پاکستان سے13ارب31کروڑ80لاکھ ڈالر کی اشیاء بیرون ملک برآمد کی گئیں جو گزشتہ سال سے بھی 4فیصد کم ہیں جبکہ اسی دوران پٹرولیم مصنوعات اور دوسری اشیاء کی درآمد پر 33ارب52کروڑ20لاکھ ڈالر خرچ ہوئے جو پچھلے سال کی نسبت16فیصد زیادہ ہیں‘بیرونی تجارت میں صرف فروری کے دوران خسارے میں 88فیصد کا ریکارڈ اضافہ دیکھا گیا ہے۔برآمدات کا حجم ایک ارب64کروڑ ڈالر جبکہ درآمدات پر4ارب44کرو ڑ ڈالر سے زیادہ خرچ ہوئے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -