اعلیٰ تعلیم کے حصول کے بغیر ترقی کا خواب شرمندہ تعبیر نہیں ہو سکتا :گورنرسندھ

اعلیٰ تعلیم کے حصول کے بغیر ترقی کا خواب شرمندہ تعبیر نہیں ہو سکتا :گورنرسندھ

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر) گورنر سندھ محمد زبیر نے کہا ہے کہ تعلیم انسان کو شعور دیتی ہے جدید دور میں اعلیٰ تعلیم کے حصول کے بغیر ترقی کا خواب شرمندہ تعبیر نہیں ہو سکتا ، ملک کی تعمیر و ترقی میں تعلیم بنیاد ی اہمیت کی حامل ہے کیونکہ تعلیم یافتہ معاشرہ ہی بہتر اور درست طریقہ سے ترقی کی دوڑ میں شامل ہو سکتا ہے ،پاکستان با الخصوص صوبہ سندھ میں جدید دور کے تقاضو ں کے مطابق اعلیٰ تعلیم کے لئے بھرپور کوششیں کی جارہی ہیں اس ضمن میں نجی شعبہ معیار تعلیم کے فروغ میں انتہائی معاون ثابت ہو رہا ہے اور ملیر یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی جدید دور کے تقاضوں کے مطابق اعلیٰ تعلیم کی فراہمی میں اہم ثابت ہوگی ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ملیر یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کی گراؤنڈ بریکنگ تقریب سے خطاب میں کیا ۔ اس موقع پر ملیر یونیورسٹی کی ایڈوائژری کونسل کے چیئر مین سابق سینیٹر جاوید جبار ، پروفیسر ڈاکٹر ٹیپو سلطان ، پروفیسرڈاکٹر شیر شاہ ، پروفیسر ڈاکٹر سراج الدولہ سمیت یونیورسٹی کے پروفیسرز ، ڈاکٹرز اور ماہر تعلیم سمیت دیگر بھی بڑی تعدا د میں موجود تھے ۔ گورنر سندھ نے اپنے خطاب میں مزید کہا کہ میں ملیر یونیورسٹی سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کا روشن اور تابناک مستقبل دیکھ رہا ہوں وہ دن دور نہیں جب اس کا شمار بھی معیار ی درس گاہوں میں شامل نہ ہوکیونکہ اس یونیورسٹی کی بنیاد ایک ایسے گھرانہ نے رکھی ہے جس کی طب میں بے مثل خدمات ہیں ، اس گھرانہ نے اپنے 16 ایکڑ اراضی پر قائم فارم ہاؤس کوتعلیمی درس میں تبدیل کرکے اپنے انسانیت سے قائم رشتہ محبت کو مزید اجاگر کردیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ شہر کے پسماندہ علاقہ میں اعلیٰ تعلیمی درس گاہ کا قیام قوم کو جدید معیار کی تعلیم فراہم کرنا مقصود ہے عطیہ اینڈ ظفر فاؤنڈیشن نے اعلیٰ معیار کی درس گاہ کے لئے پہلے شہر کے ایک پسماندہ علاقہ کا انتخاب کیا اور پھر اپنے اس خواب کو شرمندہ تعمیر کرنے کے لئے شب و روز محنت کررہے ہیں اوربہت جلد یہ منصوبہ اپنی پوری آب و تاب کے ساتھ ہم سب کے سامنے موجود ہوگا بلاشبہ یہ ایک عظیم شاہکار ہوگا جہاں غریب طالب علم اپنے علم کی پیاس کو بجھائیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ نجی شعبہ اعلیٰ معیار تعلیم باالخصوص جدید دور کے تقاضوں کی سہولیات کے ساتھ فروغ علم میں بھرپور کردار ادا کررہا ہے اسی جذبہ اور وژن کے ساتھ ہم ملک و قوم کی بہتر اندا زمیں خدمت کرسکتے ہیں ملیر یونیورسٹی سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کے قیام پر میں عطیہ اینڈ ظفر فاؤنڈیشن خاص طور پر پروفیسر ڈاکٹر ٹیپو سلطان کو مبارک باد پیش کرتاہوں جنھوں نے اپنی قیمتی قطعہ ارضی کو نیک مقصد کے لئے وقف کیا یہی نہیں بلکہ اس نیک مقصد کے لئے شہر کے ایک پسماندہ علاقہ کا انتخاب کیا بلاشبہ یہ قابل تقلید اقدام ہے امید ہے کہ اس درس گاہ کے طلبہ اعلیٰ تعلیم کے حصول کے بعد ملک و قوم کا نام روشن کرینگے ۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ملیر یونیورسٹی کی ایڈوائژری کونسل کے چیئر مین سابق سینیٹر جاوید جبارنے کہا کہ عطیہ اینڈ ظفر خاندان کی طبی شعبہ میں نمایاں خدمات ہیں اس خاندان نے بے وث ہو کر عوام کو صحت کی سہولیات فراہم کی ہیں شہر کے پسماندہ علاقہ کھوئی گوٹھ میں طویل عرصہ سے قائم اسپتال اس کی واضح مثال ہے ۔ پروفیسر ڈاکٹر ٹیپو سلطان نے کہا کہ ان کے خاندان میں 34 اعلیٰ کوالیفائڈڈاکٹرز تعلیم کے فروغ کے لئے شب و روز محنت کررہے ہیں حکومت تعلیم ے فروغ میں ہمارا ساتھ دے تاکہ قوم کو جدید تقاضوں کے مطابق اعلیٰ تعلیم فراہم کی جاسکے ۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -