مخالفین نے پولیس کے ذریعے ہماری آراضی پر قبضہ کیا ہے ،گل زار

مخالفین نے پولیس کے ذریعے ہماری آراضی پر قبضہ کیا ہے ،گل زار

  

رستم(نمائندہ پاکستان) مخالفین نے پولیس کے ذریعے ہماری آراضی پر قبضہ کیا ہے ، جو کہ قانون کے رکھوالوں کے ساتھ زیب نہیں دیتا ، ہمیں انصاف نہیں دیا گیا تو عدالت سے رجوع کریں گے، موضع پلوڈھیری کے رہائشی گل زار نے سدھوم پریس کلب رستم میں صحافیوں کو تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ ہم پچیس سال پہلے ساجد خان ولد گوہر خان سکنہ پلوڈھیری سے ساڑھے سات جریب آراضی خریدی تھی جس کا قبضہ بھی ہمارے ساتھ تھا اور قانونی تقاضے گرداوری وغیرہ بھی ہم ہی پورے کرتے لیکن ساجد خان کے چچا زاد بھائی عالمگیر خان نے ہماری آراضی ظفر ولد گل بخت پر فروخت کرلی جس ہوائی انتقال کرکے جاوید اقبال ولد میر عالم خان سکنہ سپینکئی کے ساتھ تبادلہ کیا جب ہم نے اپنی آراضی کا مطالبہ کیا تو جاوید اقبال نے تیار فصل کاٹ کرکے میرے بھتیجے طیب کو مارا پیٹا اور بعد ازاں ہمارے زمیندار گل شید کو دوبئی اڈہ پولیس چوکی کے انچارج ممریز خان کے ذریعے چوکی لیجا کر زبردستی تحریر پر دستخط لیا کہ میں نے فصل کے پچیس ہزار روپے وصول کرلئے اور آراضی چھوڑ دی ، انہوں نے کہا کہ پورے گاؤں والوں کو معلوم ہے کہ اس آراضی کے ہم مالکان ہیں اور جس بندے نے ہم پر فروخت کیا ہے اس نے بھی پولیس چوکی میں بیان دیا کہ پچیس سال پہلے ہم نے اس پر آراضی فروخت کرلی ہے لیکن اس کے باوجود ہمیں انصاف نہیں ملتا انہوں نے اعلیٰ حکام سے مطالبہ کیا کہ ہمیں ہماری آراضی واپس دی جائے بصورت دیگر ہم مقامی پولیس اور قبضہ لینے والوں کے خلاف عدالت سے رجوع کریں گے۔۔۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -