سیکاز یونیورسٹی کے تعاون سے ایک روزہ ‘ بائیو ٹیک ینگ لیڈر کانفرنس کا انعقاد

سیکاز یونیورسٹی کے تعاون سے ایک روزہ ‘ بائیو ٹیک ینگ لیڈر کانفرنس کا انعقاد

  

پشاور(سٹاف رپورٹر )ڈائیریکٹوریٹ اف سائینس اینڈ ٹیکنالوجی خیبر پختونخواہ اور انسٹیوٹ اف انٹیگریٹویو بائیوسائینسسز(Institute of Integrative Bio-Sciences ) سیکاز یونیورسٹی کے تعاون سے ایک روزہ ‘ بائیو ٹیک ینگ لیڈر کانفرنس کا انعقاد پشاور کے ایک ہوٹل میں کیا گیا۔یہ سائینس کے شعبے کے حوالے سے اپنی نویت کی پہلی کانفرنس تھی۔اس کانفرنس کے زریعے لائیف سائینس کے شعبے سے وابستہ طالب علم شریک ہوے اور انہوں نے ملک میں بائیو ٹیکنالوجی کے مستقبل کے حوالے سے بات چیت کی۔اس موقع پر فیصل خان ڈارئیکٹرانسٹویٹ اف انٹیگریٹویو بائیو سائینسسزنے کہا کہ یہ ہمارے لیے بہت ضروری ہے کہ اسطرح کے پروگرام نوجوان طالب علموں کے لئے ترتیب کریں تاکہ ان کو نئے اڈیاز اور خیالات سے روشناس کیا جاسکے۔انہوں نے مزید کہا کہ اسطرح کے پروگرام ترتیب دینے سے نوجوانوں کو ناامیدی سے امید کی کرن نظر ائے گی۔انہوں نے کہا کہ یہ دور بائیوٹیکنالوجی کا دورہے ۔ڈائیکٹراف سائینس اینڈ ٹیکنالوجی ظہورالحق نے کہااسمیں کوئی شک نہیں ہے کہ ہم انفارمیشن ٹیکنالوجی میں پھچیے ہیں لیکن ہم پھر بھی ابھرتے ہوئے ٹیکنالوجی میں پیچے نہیں رہے اور سانتٹک بیالوجی میں اگے رہیں۔ انہوں نے کہا کہ خیبر پختونخواہ حکومت سائینس پالیسی پھر کام کررہی ہیں تاکہ صوبہ سائینس اور ٹییکنالوجی میں ترقی کرسکیں۔بائیوٹیکنالجسٹس کی ایک ٹیم جس نے پاکستان کی نمائیندگی بوسٹن میں ایک بین الاقوامی (IGEM) مقابلے میں کی اور گولڈ میڈل بھی حاصل کیا۔اس ٹیم کو فنڈ ڈائیکٹورئیٹ اف سائینس اینڈ ٹیکنالوجی نے اسی پراجیکٹ کے تحت دیاتھا۔اس کانفرنس کے اختتام پر (IGEM) ٖ فلوشپ کو تین سال وسعت دینے کا بھی اعلان کیا گیا جس کو شرکاء نے خوب سراہا۔اس فلوشپ کے لیے طلباء (SynBioKP)ویب سائیٹ پر اپلائی کر سکتے ہیں۔پروگرام کے اختتام پر شرکاء کو اعزازی اسناد سے نوازا گیا۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -