ٹانک کے ترقیاتی منصوبوں پر سودے بازی قبول نہیں:بیٹنی قبائل

ٹانک کے ترقیاتی منصوبوں پر سودے بازی قبول نہیں:بیٹنی قبائل

  

ٹانک (نمائندہ خصوصی)نیم قبائلی علاقہ جات ایف ار ٹانک کے ترقیاتی منصوبوں پر کسی قسم کی سودے بازی قبول نہیں کی جائیگی بندوبستی علاقے سے تعلق رکھنے والے سیاسی کارکن اور انکی پشت پناہی کرنے والے ٹانک کے مسائل پر توجہ دیں ایف آر ٹانک کے سالانہ ترقیاتی پروگرام کی تقسیم میں غیر مقامی افرادکی مداخلت کسی صورت برداشت نہیں کی جائیگی ان خیالات کااظہار ایف ارٹانک بیٹنی قبائل سے تعلق رکھنے والے مشران ملک حاجی نور الدین خان ، ملک بختہ میر ،ملک رئیس خان بیٹنی ، ملک نصیب جان ،ملک بلوس خان اورملک میرانشاہ نے پریس کلب ٹانک میں پریس کانفرنس کے دوران کیا ان کا کہناتھاکہ ضلعی حکومت ٹانک گزشتہ تین سالوں سے ہارس ٹریڈنگ میں ملوث جبکہ کسی قسم کا ترقیاتی کام نہ کرسکی بلکہ ایک دوسرے کو گرانے اور ترقیاتی فنڈز کو روکوانے کیلئے عدالتوں میں مقدمات دائر کررکھے ہیں جسکے باعث 33کروڑ کا ترقیاتی بجٹ ہوا میں لٹک رہاہے اور ضلع بھر میں ایک روپے کا ترقیاتی کام بھی نہیں ہواجو ضلعی حکومت کی ناکامی کا منہ بولتا ثبوت ہے ۔انہوں نے کہا کہ ضلعی حکومت کے کارندے ڈپٹی کمشنر /پولیٹیکل ایجنٹ ایف ار ٹانک برکت اللہ مروت کو مختلف حیلے بہانوں کے ذریعے بلیک میل کرکے ایف ار ٹانک کی ترقیاتی اسکیمیں حاصل کرنا چاہتے ہیں انہوں نے مزید کہاکہ مذکورہ اسکیمیوں پر صرف ایف ار ٹانک بیٹنی قبائل کا حق ہے جبکہ سالانہ اے ڈی پی خالصتاً میرٹ کی بنیاد پرمستحق علاقوں کو دی گئی ہے۔انہوں نے پی ٹی ائی چےئرمین عمران خان اوروزیراعلیٰ خیبرپختونخوا پرویز خٹک سے مطالبہ کیاکہ ضلعی حکومت ٹانک اور پی ٹی ائی کارکنوں کو ایف ار ٹانک کی ترقیاتی اسکیموں اور دیگر معاملات میں مداخلت سے باز رکھا جائے بصورت دیگر صوبائی حکومت کے خلاف احتجاجی تحریک چلانے پر مجبورہونگے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -