پی ٹی سی ایل پنشنرزکا اجلاس ،طبی سہولیات میں مشکلات کا سامنا

پی ٹی سی ایل پنشنرزکا اجلاس ،طبی سہولیات میں مشکلات کا سامنا

  

پشاور (کرائمز رپورٹر) پی ٹی سی ایل پنشنرز کا ایک اجلاس زیر صدارت پی ٹی سی ایل پنشنرز ایسوسی ایشن کے صوبائی صدر اور آل پاکستان پی ٹی سی ایل پنشنرز ایکشن کمیٹی کے کنونیزاکرام منعقد ہوا ۔ اجلاس میں ایسوسی ایشن کے جنرل سیکرٹری حاجی جہانزیب خان ، فنانس سیکرٹری صادق علی کے علاوہ ایسوسی ایشن کے ایگزیکٹیو ممبر زاور کثیر تعداد میں پنشنرز حضرات نے شرکت کی۔ اجلاس کی کاروائی کا آغاز گل رحیم نے تلاوت کلام پاک سے کیا۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ایسوسی ایشن کے جنرل سیکرٹری حاجی جہانزیب خان نے کہا کہ پی ٹی سی ایل کے ریٹائرڈ ملازمین کو میڈیکل سہولیات کے حصول میں مشکلات کا سامنا ہے ایسوسی ایشن کے صدر اور ایکشن کمیٹی کے کنوینر اکرام اللہ نے کہا کہ پی ٹی سی ایل نے ملک بھر کی طرح خیبر پختونخواہ کے ریٹائرڈ ملازمین کے ساتھ سوتیلی ماں جیسا سلوک روا رکھے ہوئے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ پی ٹی سی ایل ہیڈ کوارٹرز کے ڈسپنسری کی سہولیات کی طرف دیکھتے ہوئے افسوس سے کہنا پڑتا ہے کہ پی ٹی سی ایل ہیڈ کوارٹر ڈسپنسری کی طرح ملک بھر کے دوسرے ڈسپنسریوں میں یہ سہولت مہیا کیوں نہیں کی جاتی کیونکہ ہیڈ کوارٹر کے ڈسپنسری کو جو فنڈ مہیا کیا جاتا ہے اُس کے مقابلے میں پورے پاکستان ڈسپنسریوں کو فنڈ آٹے میں نمک کے برابرمہیا کیا جاتاہے۔حالانکہ یہی پنشنرز نے 25تا 35سال اس محکمے کی بے لوث خدمت کی ہے جس کا صلہ یہ ملتا ہے کہ پنشنرز کو وہ سہولت میسر نہیں جو کہ ہیڈ کوارٹر کے ڈسپنسری میں موجود ہے اکرام اللہ نے مزید کہا کہ پینل ہسپتال سے سپشلسٹ ڈاکٹر کے تجویز کردہ دوائیاں ڈسپنسریوں میں دستیاب نہیں ہوتی انھو ں نے پی ٹی سی ایل انتظامیہ سے پُرزور الفاظ میں مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملک بھر کے ڈسپنسریوں کے ساتھ ساتھ کے پی کے کے ڈسپنسریوں کے لیے فنڈ جو کہ آٹے میں نمک کے برابر ہے کا قد غن ختم کرکے پی ٹی سی ایل ہیڈ کوارٹر ڈسپنسری جتنا فنڈ اور مراعات مہیا کیا جائے ۔ ریفر چٹ کے طریقہ کار کو ختم کرکے پنشنرز کو اسلام آباد کے طرز پر میڈیکل سمارٹ کارڈ جاری کرکے پینل ہسپتالوں سے ڈائریکٹ مریضوں کو علاج معالجے کی سہولت فراہم کی جائے۔ پینل پر موجود ہسپتالوں کے سپیشلسٹ ڈاکٹروں کے تجویز کردہ دوائیوں کے لیے لوکل پرچیز کا طریقہ کار دوبارہ بحال کیا جائے ۔ پشاور کے آرٹی ٹی ایس ڈسپنسری میں فی میل ڈاکٹر موجود نہیں ہے وہاں فی میل ڈاکٹر تعینات کی جائے۔ اور ہمارے مطالبات پر غور نہیں کیا گیا توایکشن کمیٹی اس پیرانی حالی میں احتجاج کرنے پر مجبور ہوگی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -