سپریم کورٹ نے سندھ پبلک سروس کمیشن کے زیر اہتمام 2013ءسے 2016ءتک تمام امتخانات کالعدم قرار دیدیے

سپریم کورٹ نے سندھ پبلک سروس کمیشن کے زیر اہتمام 2013ءسے 2016ءتک تمام امتخانات ...
سپریم کورٹ نے سندھ پبلک سروس کمیشن کے زیر اہتمام 2013ءسے 2016ءتک تمام امتخانات کالعدم قرار دیدیے

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )سپریم کورٹ نے سندھ پبلک سروس کمیشن کے زیر اہتمام ہونے والے 4سال کے تمام امتخانات کالعدم قرار دے دیے ۔

جیو نیوز کے مطابق سپریم کورٹ نے سندھ پبلک سروس کمیشن سے متعلق از خود نوٹس کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے سندھ پبلک سروس کمیشن کے زیر اہتمام 2013ءسے 2016ءتک تمام امتخانات کو کالعدم قرار دیدتے ہوئے امتخانات میںشریک تمام امیدواروں کو دوبارہ سے امتخانات دینے کا حکم سنایا ہے ۔

فیصلہ جسٹس مظہر عالم میاں خیل نے پڑھ کر سنایا ۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ امتحانات میں 27ہزار سے زائد امیدواروں نے شرکت کی تھی جن میں 600 سے زائد امیدوار کامیاب ہوئے تھے ۔

مزید :

قومی -