گستاخانہ مواد کیس:توہین رسالت کا مرتکب کسی صورت قانون کے شکنجے سے نہیں بچ سکے گا،جسٹس شوکت صدیقی

گستاخانہ مواد کیس:توہین رسالت کا مرتکب کسی صورت قانون کے شکنجے سے نہیں بچ سکے ...
گستاخانہ مواد کیس:توہین رسالت کا مرتکب کسی صورت قانون کے شکنجے سے نہیں بچ سکے گا،جسٹس شوکت صدیقی

  

اسلام آباد(صباح نیوز)سوشل میڈیاپر مقدس ترین ہستیوں کی شان میں گستاخی کے معاملے پر اسلام آباد ہائی کورٹ میں کیس کی سماعت ہوئی۔جسٹس شوکت صدیقی نے کہا کہ توہین رسالت کا مرتکب کسی صورت قانون کے شکنجے سے نہیں بچ سکے گا۔سماعت 17مارچ تک ملتوی کردی گئی۔ایس ایس پی ساجد کیانی، سیکریٹری داخلہ، چیئرمین پی ٹی اے عدالت میں پیش ہوئے۔ ڈائریکٹر ایف آئی اے نے عدالت کو بتایا کہ فیس بک کو متنازع پیجز بند کرنے کی درخواست دی ہے۔ ہم ابھی انکوائری اسٹیج پر ہیں, بین الاقوامی قانون کے تحت درخواست تیار کرکے جلد دائر کریں گے۔ جس پر عدالت نے استفسار کیا کہ انکوائری کب تک مکمل ہو جائے گی۔

ڈائریکٹر ایف آئی اے کی جانب سے عدالت کو احتیاط کے ساتھ توہین رسالت کے مرتکب افراد کے خلاف تحقیقات کے بعد کارروائی کی یقین دہانی کروائی گئی۔ جسٹس شوکت صدیقی نے کہا کہ آپ احتیاط کریں گے تو کوئی بھی گستاخ بچ نہیں سکے گا۔جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے ریمارکس دیئے کہ توہین رسالت کا مرتکب کسی صورت قانون کے شکنجے سے نہیں بچ سکے گا۔ آخری فیصلہ لکھنے کیلئے علما، صحافیوں اور وکلا سمیت نقادوں سے بھی رائے لی جائے گی۔

جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے علما اور صحافیوں سے اپنے حق میں کسی قسم کی مہم نہ چلانے کی درخواست کرتے ہوئے کہا کہ ان کے خلاف جو الزامات ہیں وہ اس کے لئے قذافی اسٹیڈیم میں اوپن ٹرائل کے لیے تیار ہیں۔ جس کے بعد کیس کی سماعت 17مارچ تک ملتوی کردی گئی۔

مزید :

اسلام آباد -