سینیٹ میں پٹرولیم مصنوعات میں اضافے پر تحریک التواء، تیل کی قیمت کا بوجھ عام آدمی پر پڑتا ہے: اعظم سواتی

سینیٹ میں پٹرولیم مصنوعات میں اضافے پر تحریک التواء، تیل کی قیمت کا بوجھ عام ...
سینیٹ میں پٹرولیم مصنوعات میں اضافے پر تحریک التواء، تیل کی قیمت کا بوجھ عام آدمی پر پڑتا ہے: اعظم سواتی

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان تحریک انصاف کے سنیٹر اعظم سواتی کی جانب سے پٹرولیم مصنوعات میں اضافے پر جمع کرائی گئی تحریک التواءپر  آج سینیٹ میں بحث کی گئی۔ بحث کے دوران اعظم سواتی نے وزیر اعظم پاکستان سے مطالبہ کیا کہ وہ بتائیں مصنوعات میں اضافہ کیوں ناگزیر تھا۔ حکومت پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں پر نظر ثانی کرے۔ تیل کی قیمت بڑھنے سے بوجھ غریب پر ہی پڑتا ہے۔

حکومت نے پٹرول کی قیمتوں میں اضافے کا اعلان کر دیا

اس موقع پر وزیر پٹرولیم شاہدخاقان عباسی نے جواب دیتے ہوئے کہا کہ حکومت تیل کی قیمت کا بوجھ عوام پر نہیں ڈالنا چاہتی۔ حکومت نے کم سے کم بوجھ عوام پر ڈالنے کی کوشش کی۔ وزیر پٹرولیم نے ایوان کو بتایا کہ ڈیزل میں 2.18 روپے اضافہ ہونا تھا ، 1.52 روپے اضافہ کیا۔ مٹی کے تیل میں 17.55کا اضافہ ہونا تھا لیکن نہیں کیا۔ پٹرول کی قیمت میں 2روپے 91 پیسااضافہ ہونا تھامگر حکومت نے محض ایک روپے 71 پیسے اضافہ کیا۔

مزید :

قومی -