قومی اسمبلی کا اجلاس ، خورشید شاہ نے حسین حقانی کو غدار قرار دے دیا

قومی اسمبلی کا اجلاس ، خورشید شاہ نے حسین حقانی کو غدار قرار دے دیا
قومی اسمبلی کا اجلاس ، خورشید شاہ نے حسین حقانی کو غدار قرار دے دیا

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) قومی اسمبلی کا جلاس، خورشید شاہ نے حسین حقانی کو غدار قرا دے دیا۔ جو یہاں پیدا ہو اور باہر جا کر غداری کرے ایسے شخص کو اہمیت دینے کی ضرورت نہیں اور نہ ہی ایسے شخص کا تذکرہ ایوان میں کیا جانا چاہیئے۔

حکومت کی منظوری سے پاکستان میں امریکی خفیہ ادارے سی آئی اے کے اہلکاروں کو سہولت فراہم کی ،حسین حقانی نے اعتراف کر لیا

گذشتہ دنوں حسین حقانی کی جانب سے لکھے گئے آرٹیکل کے بعد ایک نیا پنڈورا باکس کھل گیا ہے ، ان کے تازہ آرٹیکل جس میں انہوں نے انکشاف کیا کہ ’’پاکستان  حکومت کی رضامندی سے سی آئی نے پاکستان میں کارروائیاں کیں کی‘‘ گونج قومی اسمبلی میں گونجنے لگی۔پی پی نے حسین حقانی کے الزامات کی تردید کردی ۔آج قومی اسمبلی میں نکتہ اعتراض کا جواب دیتے ہوئے خورشید نے کہا کہ ہم ایسے شخص کی اہمیت بڑھانا نہیں چاہتے۔حسین حقانی کی اتنی اہمیت نہیں کہ ان کا ایوان میں تذکرہ کیا جائے، کچھ وجوہات کی بنا پر انہیں سفیرکے عہدے سے ہٹا کر شیر ی رحمان کو سفیر بنایا گیا۔ جو یہاں پیدا ہوا اور باہر جا کر غداری کرے اس کا تذکرہ نہ کیا جائے۔حسین حقانی کے بیان کے مذمت کرنا ان کی اہمیت بڑھانا ہے۔حسین حقانی کا مقصد دنیا میں پاکستان کو بدنام کرنا ہے۔

ایسا کوئی معاہدہ نہیں کیا جس سے پاکستان کے مفادات متاثر ہوں ،حسین حقانی پر یہ سب لکھنے کا دباﺅ ہو سکتا ہے:شیریں رحمان

اویس لغاری نے پیپلز پارٹی سے مطالبہ کیا کہ وہ حسین حقانی کے الزامات سے اعلان لاتعلقی کرے۔حسین حقانی توجہ حاصل کرنے کے لئے پیٹھ پر وار کرتا ہے۔ایسے گماشتوں کو بڑھانے کی بجائے نظر انداز کر دینا چاہئے۔ حسین حقانی نے پاکستان کے خلاف ہرزہ سرائی کی۔ تحریک انصاف کے عارف علوی نے الزام عائد کیا کہ حسین حقانی نے امریکی ایجنٹوں کو ویزے جاری کئے ۔

مزید :

قومی -