سعودی عرب میں بچوں کے سامنے تمباکو نوشی جرم قرار

سعودی عرب میں بچوں کے سامنے تمباکو نوشی جرم قرار
سعودی عرب میں بچوں کے سامنے تمباکو نوشی جرم قرار

  

جدہ(این این آئی)پبلک پراسیکیوشن کے ادارے نے سگریٹ نوشی کے حوالے سے قوانین وضع کرتے ہوئے کہا ہے کہ کم عمر بچوں کو سگریٹ خریدنے کیلئے بھیجنا ۔ انہیں تمباکو نوشی کی ترغیب دینا جرم تصور کیا جائے گا۔

سعودی اخبار کے مطابق گزشتہ ہفتے سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی وہ وڈیو جس میں ایک شخص اپنی کمسن بیٹی کو زبردستی سگریٹ پلا رہا تھا، کے بعد پبلک پراسیکیوشن نے مذکورہ شخص کی گرفتاری کے احکامات جاری کرتے ہوئے اس کے عمل کو بچوں کے خلاف قرار دیا۔ مذکورہ وڈیو کے بعد پراسیکوشن کے ادارے کی جانب سے بچوں کے تحفظ کے قانون کو حتمی بناتے ہوئے کہا گیا ہے کہ جو شخص یا افراد کم عمر بچوں کے ساتھ بیٹھ کر تمباکو نوشی کریں گے یا انہیں سگریٹ نوشی کی ترغیب دیں انکا یہ عمل قانون شکنی کے دائرے میں آئیگا، جس پر باقاعدہ مقدمہ چلایا جاسکتا ہے۔ کم عمر بچوں سے سگریٹ خریدوانا بھی خلاف قانون ہے۔

مزید :

عرب دنیا -