8 سرکاری یونیورسٹیز مستقل وائس چانسلرز سے محروم ہیں، مراد راس

8 سرکاری یونیورسٹیز مستقل وائس چانسلرز سے محروم ہیں، مراد راس

  

لاہور( نمائندہ خصوصی )پاکستان تحریک انصاف وسطی پنجاب کے سیکرٹری اطلاعات اور رکن پنجاب اسمبلی ڈاکٹر مراد راس نے ایک تحریک التوائے کار پنجاب اسمبلی میں جمع کروا دی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ نجی اخبار کی خبر کے مطابق پنجاب کی8 سرکاری یونیورسٹیز مستقل وائس چانسلرز سے محروم جبکہ متعدد میں رجسٹرارز، خزانچی اورکنٹرولرز امتحانات تاحال تعینات نہ ہوسکے، جامعات میں انتظامی اور مالی بحران اور کمانڈاینڈ کنٹرول کی موثر مانیٹرنگ کے لئے سنڈیکٹ بھی فعال نہ ہو سکیں اور نہ ہی اکیڈمک کونسلزبن سکیں، انتظامی عہدوں کا عارضی چارج دینے سے تعلیمی درسگاہوں میں بے ضابطگیوں اوربدعنوانیوں کے واقعات میں بھی اضافہ ہونے لگا۔ تفصیلات کے مطابق پنجاب کی 8یونیورسٹیز میں تاحال وائس چانسلر ز کی مستقل تقرری عمل میں نہیں لائی جا سکی ہے۔مستقل وائس چانسلرز سے محروم سرکاری یونیورسٹیز میں پنجاب یونیورسٹی لاہور،انفارمیشن ٹیکنالوجی یونیورسٹی، لاہور،یونیورسٹی آف ہوم اکنامکس گلبرگ، یونیورسٹی آف ساہیوال، یونیورسٹی آف اوکاڑہ، یونیورسٹی آف جھنگ، غازی یونیورسٹی ڈی جی خان،گورنمنٹ خواتین یونیورسٹی ملتان شامل ہیں۔ مذکورہ یونیورسٹیز میں انتظامی عہدوں پر عرصہ دراز سے مستقل تعیناتیاں نہ ہونے خصوصا وائس چانسلر کی تعیناتیاں نہ ہونے کے باعث تعلیمی درس گاہیں بد انتظامی اور مالی مشکلات سے دوچار ہیں جبکہ طلبا وطالبات اوروالدین کو بھی شدید مشکلات کا سامنا ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -