ضلعی حکومت کی عدم توجہی، شاہ عالم مارکیٹ میں تجاوزات کی بھرمار

ضلعی حکومت کی عدم توجہی، شاہ عالم مارکیٹ میں تجاوزات کی بھرمار

  

لاہور(سروے رپورٹ:اسد اقبال ، عکاسی ، عمر شریف)صو بائی دارالحکومت میں واقع ایشیا ء کی سب سے بڑی تھو ک مارکیٹ شاہ عالم میں ضلعی حکومت کی عدم تو جہی ،لاپرواہی اور بے ہنگم پن کے باعث تاجروں کے لیے کاروبار کر نا مشکل ہو گیا ہے جہاں پر تجاوزات کی بھر مار ، عارضی ٹھیلے جہاں ٹریفک کے نظام میں بری طرح حائل ہیں وہیں بیوپاریوں کا پیدل چلنا بھی محال ٹھر چکا ہے ۔ ستم بالا ستم یہ کہ شاہ عالم مارکیٹ کے مین راستے پر ٹریفک وارڈنز کی ڈیوٹی ہونے کے باوجود فرائض میں غفلت کے مرتکب سرکاری اہلکار غائب دکھائی دیتے ہیں ۔ذرائع کے مطابق راوی ٹاؤ ن کے افسران سمیت عملہ تہہ بازاری کے اہلکار تجاوزات کی سرپرستی کر کے لاکھوں روپے ہفتہ وار بھتہ اکھٹا کر رہے ہیں دوسری جانب شاہ عالم مارکیٹ میں اربوں روپے کا سالانہ ٹیکس ادا کر نے والے تاجر عدم تحفظ کا شکار ہیں ۔تفصیلات کے مطابق شاہ عالم مارکیٹ میں اشیائے ضروریہ سمیت اشیائے خوردونوش کی اشیاء کا کاروبار تھوک کی سطح پر ہوتا ہے جہاں پر ملک بھر سے بیو پاری بڑی تعداد میں اشیاء خریدنے آتے ہیں تاہم پارکنگ کا موثر نظام نہ ہونے اور تجاوزات کے باعث ٹریفک کے اژدھام سے گزرتے ہوئے مشکلات کا سامنا درد سر بن کر رہ جاتا ہے ۔شاہ عالم مارکیٹ کے مین راستے سمیت پلازوں اور مارکیٹوں میں تجاوزات کی بھر مار میں جہاں دکانداروں کا خود کردار ہے وہیں راوی ٹاؤ ن نے کھلی چھٹی دیتے ہوئے نہ صرف دکانداروں کو سامان لگانے کی اجازت دے رکھی ہے بلکہ عارضی ٹھیلے لگوا کر روزانہ کی بنیاد پر پیسے وصول کیے جاتے ہیں ۔تاجر رہنماء جاوید بٹ ،عمر بٹ اور اشفاق بٹ نے بتایا کہ شاہ عالم مارکیٹ میں تجاوزات کے خلاف میئر لاہور کر نل (ر)مبشر جاویدنے بلا امتیاز گرینڈ آپریشن کرتے ہوئے مارکیٹ کو صاف ستھرا کر دیا جس کے لیے میئر صاحب نے متعلقہ ٹاؤ ن کی بجائے داتا گنج بخش ٹاؤ ن کے تہہ بازاری افسران و اہلکاروں کو ہنگامی بنیادوں پر خدمات لیں جس پر شاہ عالم مارکیٹ کی تاجرنے میئر کی مثبت کاوشوں کو سراہا تاہم ایک ہفتہ میں ہی تجاوزات دوبارہ اپنی اپنی جگہ پر قائم ہو گئیں ۔واضح رہے کہ شاہ عالم مارکیٹ میں روزانہ اربوں روپے کا کاروبار ہوتا ہے جہاں پر نہ تو کوئی پولیس اہلکار دکھائی دیتا ہے اور نہ کوئی پرائیویٹ سیکیورٹی اہلکار جس کے سبب دوسرے شہروں سے آنے والے بیوپاریوں کو عدم تحفظ کا سامنا بھی رہتا ہے ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -