سکولوں میں خواتین اسا تذہ کے جینز پہننے پر پابندی عائد

سکولوں میں خواتین اسا تذہ کے جینز پہننے پر پابندی عائد

  

لاہور(جنرل رپورٹر،نمائندہ پاکستان) صوبائی دارلحکومت کے سکولوں میں خواتین اسا تذہ کے جینز پہننے پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔خواتین اساتذہ جنیز اور کاٹن کی پینٹ پہن کر سکول میں داخل ہو سکیں گی نہ ہی کلاس روم جا سکیں گی۔اسی طرح درجہ چہارم کے ملازمین عام کپڑے پہن کر سکول میں داخل نہیں ہو سکیں گے ان کے لیے ملائشیا کی یونیفارم پہن کر سکول آنا لازمی قرار دے دیا گیا ہے جس کا باقاعدہ طور پر نوٹیفکیشن جاری کر دیا گیا ہے۔جس کے مطابق سکول میں خواتین اساتذہ کے جینز پہننے پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔ ذرائع کے مطابق اب فیشن پر توجہ ہو گی کم اورتعلیم پر بڑھے گا زور،محکمہ سکول ایجوکیشن نے سکول اساتذہ کے جینز پہننے پر پابندی عائد کردی۔ سکول اساتذہ کو بند جوتے پہننے کی ہدایت کر دی گئی۔ دوسری طرف ڈسٹرکٹ ایجوکیشن اتھارٹی نے سکولز کے درجہ چہارم کے ملازمین کو بھی کالے رنگ کا یونیفارم پہننے کی ہدایت کر دی۔اس حوالے سے محکمہ سکولز نے تمام ڈسٹرکٹ ایجوکیشن اتھارٹیز کو حکم دیا ہے کہ وہ احکامات پر فوری طور پر عملدرآمد کرایا جائے خلاف ورزی کے مرتکب میل اور فیمیل اساتذہ کے خلاف تادیبی کاروائی کی جائے اس حوالے سے محکمہ تعلیم کے ترجمان کا کہنا ہے کہ میل اور فیمیل اساتذہ دونوں پر فیصلے کا اطلاق ہو گا جس کا مطلب اساتذہ کی فیشن کی بجائے تعلیم پر توجہ مرکوز کرانا ہے۔

پابندی عائد

مزید :

صفحہ اول -