درندگی کا ایک اور واقعہ ، شکر گڑھ میں چھ سالہ بچی بداخلاقی کے بعد قتل

درندگی کا ایک اور واقعہ ، شکر گڑھ میں چھ سالہ بچی بداخلاقی کے بعد قتل

  

شکرگڑھ،نارووال ( نامہ نگار،نمائندہ خصوصی)چھ سالہ بچی کو بداخلاقی کے بعد گلا دبا کر قتل کر دیا گیا،پہلی کلاس کی طالبہ کو ہاتھ اور منہ باندھ کر بداخلاقی کا نشانہ بنایاگیا،پولیس نے ملزم گرفتار کر لیا،ضلع نارووال کی تحصیل ظفر وال کے نواحی گاؤں سورج چک میں محنت کش ارشد علی کی چھ سالہ بیٹی زینب ارشد گزشتہ سہ پہر گھر کے باہر کھیلتی ہوئی اچانک گم ہوگئی تھی ،بچی کے والد ارشد علی اور دیگر اہل خانہ بچی کو تلاش کرتے رہے مگر رات گئے تک بچی نہ مل سکی ،زینب کے والد ارشد علی نے پولیس تھانہ لیسر کلاں کو بچی کے اچانک گم ہونے کی اطلاع دی ،پولیس موقع پر پہنچ گئی اور تفتیش شروع کردی ،پولیس تھانہ لیسر کلاں نے اہل دیہات کی مدد سے رات بھر گاؤں کی ریکی کی اور تلوع آفتاب ہونے پر گاوں کے گھر گھر کی تلاشی کا عمل شروع کر دیا ،اہل علاقہ اور پولیس نے شک کی بنیاد پرمقامی رہائشی محمد اقبال جو گھر میں ہی کپڑے سلائی کاکام کرتاہے کے گھر کی تلاشی لی ، محمد اقبال گھر پر موجود نہ تھا ، پولیس نے تلاشی کے دوران پیٹی کو کھولا تو پیٹی میں سے چھ سالہ زینب کی نعش مل گئی ،پولیس نے اہل خانہ کو حراست میں لے کر ابتدائی تفتیش کی تو معلوم ہوا کہ محمد اقبال کا 30سالہ بیٹا محمد قیصر نے بچی کوبداخلاقی کا نشانہ بنایا اور بعد میں بچی کو قتل کر کے کپڑے رکھنے والی پیٹی میں بند کر دیاتھا،پولیس تھانہ لیسر کلاں نے زینب کی نعش کو قبضہ میں لیکر پوسٹمارٹم اور ضروری قانونی کارروائی کیلئے تحصیل ہیڈ کوارٹرز ہسپتال شکر گڑھ منتقل کردیا ، بچی کے والد ارشد علی نے بتایاکہ چھ سالہ زینب پہلی کلاس کی طالبہ تھی جسے ملزم نے قتل کر دیا،ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر نارووال عمران کشور نے بتایاکہ گاؤں سورج چک کا رہائشی محمد اقبال اور اس کا بیٹا 30سالہ قیصر گھر پر ہی کپڑوں کی سلائی کا کام کرتے ہیں گزشتہ روز ارشد علی کی چھ سالہ بیٹی زینب ارشد ایک پلاس جو محمد اقبال کے گھر سے کسی کام کیلئے لایا تھا بچی واپس کرنے کیلئے گئی تھی ، ملزم محمد قیصر نے گھر میں دیگر اہل خانہ موجود نہ ہونے کی وجہ سے بچی کو زبردستی پکڑ کر عقبی کمرے میں لے گیا اور زبر دستی زینب کو بداخلاقی کا نشانہ بنایااور بعد ازاں اس کا گلا دباء کر قتل کر دیا،پولیس تھانہ لیسر کلاں نے ملزم قیصر کو گرفتار کرکے مقتولہ زینب ارشد کے والد ارشد علی کی درخواست پر ملزمان قیصر اور یاسر کے خلاف زیر دفعہ 302اور 201ت پ کے تحت مقدمہ درج کر لیاہے ۔

مزید :

صفحہ اول -