عاصمہ قتل کیس، مقتولہ کے بھائی نے راضی نامے کی تردید کردی

عاصمہ قتل کیس، مقتولہ کے بھائی نے راضی نامے کی تردید کردی

  

کوہاٹ (مانیٹرنگ ڈیسک)کوہاٹ میں رشتے سے انکار پر قتل ہونے والی میڈیکل کی طالبہ عاصمہ رانی کے بھائی عمران نے گرفتار ملزم مجاہد اللہ آفریدی پر دہشت گردی ایکٹ کے تحت مقدمہ چلانے کا مطالبہ کردیا۔گزشتہ دنوں کوہاٹ میں قتل کی گئی عاصمہ رانی کے قاتل مجاہد اللہ آفریدی کو انٹرپول کے ذریعے شارجہ سے پاکستان منتقل کیا گیا جہاں اسے خیبرپختونخوا پولیس نے حراست میں لیا۔مقتولہ عاصمہ رانی کے بھائی عمران نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملزمان بااثر ہیں جس کے باعث ہمارے لیے سیکیورٹی مسائل ہیں لیکن کیس میں ہمیں کوئی راضی نامہ نہیں کرنا اور اس کے قاتل کو بھی معاف نہیں کریں گے۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ ملزم نے ظلم کیا لہٰذا اس کیخلاف دہشت گردی کا مقدمہ چلایاجائے۔عمران کا کہنا تھا کہ کوہاٹ میں کیس چل رہا ہے اور یہاں ہم پر دباؤ ہے لہذا عدالت سے گزارش ہے کہ ہمارا کیس کوہاٹ سے کہیں اور منتقل کیا جائے۔انہوں نے کہا کہ مجاہد آفریدی ہراساں کرنے کے ساتھ میری بہن کو دھمکیاں بھی دیتا تھا اور مجاہد نے عاصمہ کو دھمکی دی تھی کہ آپ کے گھر میں گرنیڈ پھینکیں گے۔عمران کا کہنا تھا کہ ہمارا آفریدی قوم سے کوئی تنازعہ اور گلہ نہیں کیوں کہ یہ ملزم کا انفرادی فعل تھا جس کی سزا اسے ملنی چاہیئے۔

مزید :

صفحہ آخر -