جڑانوالہ: شیر جوانوں کا معمر خاتون پر تشدد

جڑانوالہ: شیر جوانوں کا معمر خاتون پر تشدد

  

جڑانوالہ (سٹی رپورٹر) چادر چاردیواری کا تقدس پامال شیر جوانوں کا گھر میں گھس کر معمر خاتون پرمبینہ بہیمانہ تشدد ، بالوں سے پکڑ کر گھسیٹتے رہے ، اہل خانہ و دیہہ ہذا نے منت سماجت کرکے جان بخشی کروائی، متاثرہ خاتون و ورثاء کا آر پی او سے از خود نوٹس لے کر انصاف و تحفظ کا مطالبہ ۔ تفصیلات کے مطابق جڑانوالہ کے نواحی گاؤں 380گ ب کی رہائشی معمر خاتون شہناز بی بی اور اس کے بیٹے ثاقب نے بتایا کہ سائلہ اپنے گھر میں موجود تھی کہ اسی دوران تھانہ روڈالہ روڈ ، اڑکانہ اور چوکی بگھوڑکے پولیس جوان چادر چاردیواری کا تقدس پامال کرتے ہوئے گھر میں داخل ہوئے اور اسے مبینہ تشدد کا نشانہ بناتے ہوئے تھپڑ مارتے ہوئے بالوں سے پکڑ کر گھسیٹتے رہے ۔ پولیس تشدد سے چیخ و پکار کی آواز سن کر اہل دیہہ و ورثاء نے منت سماجت کر کے جان بخشی کروائی جس پر پولیس جوان متاثرہ خاتون کونیم بے ہوشی کی حالت میں پھینک کر چلے گئے ورثاء نے بتایا کہ پولیس نے ہمسائیوں کے گھرریڈ کرنے کی بجائے ان کے گھر میں داخل ہو کر تشدد کا نشانہ بنایا اور سرا سر زیادتی کی۔متاثرہ خاتون کو علاج کے لیے ٹی ایچ کیو ہسپتال لایا گیا جہاں اس کی حالت مخدوش بتائی جاتی ہے۔ ورثا نے آر پی او فیصل آبادسے از خود نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

مزید :

علاقائی -