شمالی کوریا ایٹمی میزائل تجربے بند کرے، مذاکرات کیلئے امریکہ کی شرط

شمالی کوریا ایٹمی میزائل تجربے بند کرے، مذاکرات کیلئے امریکہ کی شرط

  

واشنگٹن (اظہر زمان، بیورو چیف) شمالی کوریا اور امریکہ کے درمیان مذاکرات شروع ہونے کا امکان پیدا ہواہے تاہم اس کے بارے میں امریکہ نے شرط عائد کی ہے شمالی کوریا ایٹمی میزائل تجربے بند کرے۔ امریکی وزیر خزانہ سٹیو منوچن نے یہ بات ’’این بی سی‘‘ ٹیلی ویژن کے پروگرام ’’میٹ دی پریس‘‘ میں شرکت کرتے ہوئے کہی، ان کا کہنا تھا میرا محکمہ کی شمالی کوریا سمیت دیگر ممالک یا افراد کیخلاف مالیاتی اور اقتصادی پا بند ی لگانے کا ذمہ دار ہوتا ہے۔ایک روز قبل وائٹ ہاؤس کی پریس سیکرٹری سارہ سینڈرس نے بیان دیا تھا شمالی کوریا کی طرف سے ٹھوس اور قابل تصدیق کارروائیوں کے بغیر مذاکرات نہیں ہو سکتے، صدر ٹرمپ مذاکرات کی پیش کش کے جواب میں پہلے ہی بتا چکے ہیں اس کیلئے سازگار ماحول بنانا ضروری ہے ، شمالی کوریا ایٹمی میزائل تجربے بند اور میزائلوں کی تیاری کے کام کو روک دے۔ وزیر خزانہ نے صدر ٹرمپ پر کی جا نیو ا لی تنقید کا جواب دیتے ہوئے کہا امریکہ کی طرف سے شمالی کوریا پر دباؤ کا سلسلہ جاری ہے تاہم صدر ٹرمپ اس دوران ڈپلومیسی کے ذریعے مفاہمت کے موقع کا فائدہ اٹھانا چاہتے ہیں۔ صدر ٹرمپ نے ہفتے کے روز مذاکرات کے معاملے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا تھا یہ مذاکرات کسی سمجھوتے کے بغیر ختم ہو سکتے ہیں اور جزیرہ نما کوریا کو غیر جوہری خطہ بتانے کیلئے ’’دنیا کا سب سے عظیم معاہدہ‘‘ بھی ہو سکتا ہے۔

مزید :

صفحہ آخر -