نیب کا بلین ٹری منصوبہ میں خوردبرد کی شکایات کی تحقیقات کا فیصلہ

نیب کا بلین ٹری منصوبہ میں خوردبرد کی شکایات کی تحقیقات کا فیصلہ

  

اسلام آباد (این این آئی)قومی احتساب بیورو(نیب) نے سابق وزیر اعظم نوازشریف اور اسٹیبلشمنٹ ڈویژن کے افسروں کیخلاف ہائر ایجو کیشن کمیشن کے چیئر مین مختار احمد کی مبینہ غیر قانونی تقرری اورخیبر پختونخواہ حکومت کی متعلقہ اتھارٹی کیخلاف بلین ٹری سونامی پراجیکٹ میں مبینہ خرد برد کی شکا یات کی جانچ پڑتال کا فیصلہ کیا ہے ۔ تفصیلات کے مطابق قومی احتساب بیورو کے چیئرمین جسٹس (ر)جاوید اقبال کی صدارت میں اجلاس نیب ہیڈ کوارٹرز اسلام آبادمیں منعقد ہوا جس میں نیب میں جاری راولپنڈی ،اسلام آباد میں غیر قانونی طور پر قائم نجی کوآپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹیز کیخلاف متعلقہ اداروں ، سی ڈی اے، آر ڈی اے اور آئی سی ٹیکی طرف سے غیر قانونی طور پر قائم نجی کوآپریٹو ہا ؤ سنگ سوسائٹیز کیخلاف بھی کارروائی خصوصاََ عوام کی لوٹی گئی رقوم کی واپسی کی صورتحال اور نیب میں غیر قانونی نجی کوآپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹیز کیخلاف جاری انکوائریوں اور انوسٹی گیشن پر اب تک کی پیش رفت کا جائزہ لیاگیا۔ چیئرمین نیب نے ڈی جی نیب راولپنڈی کوہدایت کی کہ عوام کی عمر بھر کی لوٹی گئی جمع پونجی کی واپسی نہ صرف یقینی بنانے میں قانون کے مطابق اقدامات اٹھائے جائیں بلکہ نیب میں جاری تمام انکو ا ئریوں اور انوسٹی گیشنز کو بر وقت مکمل کر کے بدعنوان عناصر کو انصاف کے کٹہرے میں کھڑا کیا جائے۔ چیئرمین نیب نے سی ڈی اے، آر ڈی اے اور آئی سی ٹی کوہدایت کی کہ وہ سادہ لوح عوام کو غیر قانونی نجی اور کوآپریٹو ہاؤ سنگ سوسائٹیز کے متعلق نہ صرف بر وقت آگاہی فراہمی کر یں تاکہ وہ کسی بھی قسم کی دھوکہ دہی کا شکار نہ ہوں، راولپنڈی،اسلام آباد میں قائم نجی اور کوآپریٹو ہاؤ سنگ سوسائٹیز کی نشاندہی کرتے ہوئے ان کی تفصیلات اپنی ویب سائٹ پر بھی لگائیں، عوام بھی اپنی عمر بھر کی جمع پونجی صرف قانون کے مطابق قائم نجی اور کوآپریٹو ہاؤ سنگ سوسائٹیز میں پوری تسلی اور اطمینان کے بعد لگائیں۔

نیب فیصلہ

مزید :

کراچی صفحہ اول -