ارکان سندھ اسمبلی کو اضافی تنخواہیں ادا کی جائیں،سید سردار احمد

ارکان سندھ اسمبلی کو اضافی تنخواہیں ادا کی جائیں،سید سردار احمد

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر) ارکان سندھ اسمبلی کو اضافی تنخواہیں بقایا جات کے ساتھ ادا کی جائیں ۔ یہ ان کا قانونی حق ہے ۔ اگر حکومت تنخواہ ادا نہیں کرنا چاہتی ہے تو قانون میں ترمیم کرے یا قانون کو منسوخ کرے ۔ یہ بات متحدہ قومی موومنٹ ( ایم کیو ایم ) پاکستان کے پارلیمانی لیڈر سید سردار احمد نے پیر کو سندھ اسمبلی کے اجلاس میں نکتہ اعتراض پر کہی ۔ انہوں نے کہا کہ اسپیکر ، ڈپٹی اسپیکر اور ارکان کی تنخواہوں اور مراعات میں اضافے کا بل سندھ اسمبلی نے منظور کیا تھا اور مئی 2017 میں گورنر سندھ نے اس بل کی توثیق کر دی تھی ۔ جس کے بعد یہ قانون بن گیا تھا ۔ قانون کے مطابق ارکان کو پچھلی تاریخوں سے اضافی تنخواہ ملنا تھی ۔ اگر پچھلی تاریخوں سے نہ بھی دی جائے تو مئی 2017 ء سے یہ اضافی تنخواہ اور دیگر مراعات واجب الادا ہیں ۔ اگر حکومت نہیں دینا چاہتی تو قانون میں ترمیم کرے یا قانون منسوخ کرے ۔ اگر دینا چاہتی ہے تو فوراً بقایا جات کے ساتھ ادائیگی کرے ۔ سینئر وزیر نثار احمد کھوڑو نے کہا کہ ساری دنیا جانتی ہے کہ یہ قانون سندھ اسمبلی نے منظور کیا تھا ۔ قانون کا مسودہ تیار کرنے کے لیے تمام پارلیمانی پارٹیوں کی سلیکٹ کمیٹی بنائی گئی تھی ۔ سلیکٹ کمیٹی نے دیگر صوبوں کے ارکان اسمبلی کی تنخواہوں اور مراعات کا جائزہ لیا تھا ۔ اس کے بعد یہ قانونی مسودہ تیار کیا گیا تھا ۔ اب محکمہ خزانہ کو لکھیں گے کہ وہ ارکان کو اضافی تنخواہیں اور مراعات بقایاجات کے ساتھ ادا کرے ۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -