عدلیہ مخالف تقاریر ، ہائی کورٹ نے ایک مرتبہ پھر پیمرا کو نوٹس جاری کردیا

عدلیہ مخالف تقاریر ، ہائی کورٹ نے ایک مرتبہ پھر پیمرا کو نوٹس جاری کردیا
عدلیہ مخالف تقاریر ، ہائی کورٹ نے ایک مرتبہ پھر پیمرا کو نوٹس جاری کردیا

  

لاہو(نامہ نگار خصوصی)لاہور ہائیکورٹ نے مبینہ طور پرعدلیہ مخالف تقاریر کرنے پر وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال،میاں محمدنواز شریف اور مریم نوازکے خلاف دائر توہین عدالت کی درخواست پر پیمرا اور دیگر مدعاعلیہان کو نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کر لیاہے۔

جسٹس شاہد کریم نے کیس کی سماعت کی،درخواست گزار جوڈیشل ایکٹوازم پینل کے سربراہ اظہر صدیق ایڈووکیٹ کی جانب سے عدالت کو بتایا گیا کہ پاناما کیس کے فیصلے کے بعد میاں محمدنواز شریف،ان کی صاحبزادی مریم نواز کے بعد وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال بھی عدلیہ مخالف بیان بازی پر اتر آئے ہیں جو کہ واضح طور پر توہین عدالت ہے،عدالت عالیہ نے پیمرا کو توہین آمیز مواد کی نشریات پر پابندی کے حوالے سے ہدایات جاری کر رکھی ہیں،پیمرا نے توہین عدالت پر مبنی مواد اور تقاریر نشر کرنے سے روکنے کے لئے کوئی اقدامات نہیں کئے،عدالت نے احسن اقبال،میاں نواز شریف،ان کی صاحبزادی مریم نواز اور پیمرا کو15مارچ کے لئے نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کر لیاہے،عدالت نے سیکرٹری پیمرا کو مرکزی کیس میں فریق بننے کی اجازت بھی دے دی ہے۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور