راولپنڈی ، اسلام آباد میٹروبس، وزیر اعلیٰ شہباز شریف کا پھر اچانک دورہ و معائنہ

راولپنڈی ، اسلام آباد میٹروبس، وزیر اعلیٰ شہباز شریف کا پھر اچانک دورہ و ...

اسلام آباد سے ملک الیاس

اسلام آباد اورجڑواں شہر راولپنڈی کا موسم گزشتہ روز کی بارش کے بعد خوشگوار ہوگیا ،گرمی اور لوڈشیڈنگ کے ستائے عوام نے سکھ کا سانس لیا،وزیراعلی پنجاب نے چند روز کے اندر راولپنڈی میں میٹرو س بس منصوبے پر جاری کام کی رفتار کاجائزہ لینے کیلئے دوسری بار دورہ کیا ،وزیراعلی پنجاب صبح صبح میٹرو ٹریک پر پہنچ گئے پولیس کے ساتھ ساتھ راولپنڈی انتظامیہ کی بھی دوڑیں لگ گئیں شہبازشریف نے میٹرو بس پر سوارہوکر صدر راولپنڈی سے ڈی چوک اسلام آباد تک میٹرو ٹریک کادورہ کیا،مختلف ٹرمینلز پر اتر کر دائیں بائیں جھانکا،مری روڈ پر جاری مرمتی کام کا بھی جائزہ لیا لیکن انہوں نے میٹرو بس کے افتتاح کی کوئی نئی تاریخ نہیں دی یاد رہے اس سے قبل میٹرو بس منصوبے کی تکمیل کی چھ بار ڈیڈ لائن دی جاچکی ہے مگر اس کے باوجود منصوبہ مقررہ مدت میں مکمل نہ ہوسکا ابھی بھی اسلام آباد کی حدود میں پشاور موڑ کے علاقے میں انٹر چینج اور راولپنڈی میں چند ایک اسٹیشنز کاکام رہتا ہے جس پر دن رات عملہ مصروف ہے،مری روڈ کی بھی مرمت اور تزئین و آرائش ساتھ ساتھ کی جارہی ہے میٹرو بس منصوبے کی وجہ سے سب سے زیادہ مری روڈ کے تاجر متاثرہوئے ہیں جن کا کاروبار تقریبا ایک سال سے ٹھپ پڑا ہے اور میٹرو بس منصوبے کی تکمیل کی سب سے زیادہ دعائیں تاجربرادری ہی کررہی ہے تاکہ ان کے کاروبار پھر سے شروع ہوسکیں،وزیراعلی پنجاب نے میٹرو منصوبے کے بقیہ کام کو جلد مکمل کرنیکی ہدایت تو کردی ہے لیکن اب دیکھنا یہ ہے کہ کب یہ منصوبہ پایہ تکمیل کو پہنچتا ہے۔

سپریم کورٹ نے این اے 125 اور پی پی 155 سے متعلق الیکشن ٹریبونل کا فیصلہ معطل کردیا ہے جس کے نتیجے میں رکن قومی اسمبلی خواجہ سعد رفیق اور رکن صوبائی اسمبلی میاں نصیر سابقہ حیثیت پر بحال ہوگئے ہیں ‘ سپریم کورٹ نے سعد رفیق کی درخواست منظور کرتے ہوئے سیکرٹری الیکشن کمیشن اور این اے 125کے امیدوارحامد خان سمیت آر اوز کو نوٹس جاری کردیئے ہیں اور الیکشن ٹریبونل سے انتخابات کا تمام ریکارڈ طلب کرتے ہوئے مزید سماعت چار ہفتے تک کے لئے ملتوی کردی ہے،خواجہ سعد رفیق نے عمران خان اور حامد خان کو کڑی تنقید کا نشانہ بنایا انکا کا کہنا تھا کہ ہم میرٹ پراپنا مقدمہ لڑینگے انشاء اللہ انصاف ملے گا ، عمران خان اور حامد خان نے مجھے ٹارگٹ کیا تھا جس پر میں عوامی عدالت میں جانا چاہتا تھا تاکہ مجھ پر لگائے گئے جھوٹے الزامات سامنے آئیں تاہم قانونی ماہرین کا مشورہ تھا کہ عدالتی دروازہ کھٹکھٹانا چاہئے ہم نے ایسا ہی کیا، ٹریبونل کے فیصلے پر تحفظات تھے ہم یہ چاہتے تھے کہ اس فیصلے کی تشریح ہوجائے یقین ہے ہم سرخرو ہونگے اور سچ سامنے آئے گا۔

ادھر یہ بھی سننے میں آرہا ہے کہ تحریک انصاف کی قیادت نے ایک بار پھر آزادی مارچ کے کنٹینر کو دوبارہ سڑک پر لانیکی تیاریاں شروع کردی ہیں،کنٹینر کی تزئین و آرائش ،صفائی ستھرائی کی ہدایات جاری کی گئی ہیں،اگر این اے 122کا فیصلہ پی ٹی آئی کے حق میں آیا تو آزادی کنٹینر لاہور کی سڑکوں پر ہوگا چیئرمین تحریک انصاف لاہور کی سڑکوں پر سیاسی قوت کا مظاہرہ کرینگے،خواجہ سعد رفیق کی سپریم کورٹ سے بحالی پر عمران خان کا کہنا تھا کہ خواجہ سعد رفیق کو ایک ماہ کے لئے حکم امتناعی دیا گیا ہے ،انکا کہنا تھا کہ آزاد ادارے جمہوریت کا حسن ہوتے ہیں،آزاد ادارے قانون کے اندر کام کرتے ہیں اور وہ کسی کا بھی حکم نہیں مانتے، آہستہ آہستہ یہ چیز سامنے لائیں گے کہ کیسے پاکستان میں اداروں کو چلنے نہیں دیا جاتا، بادشاہ ان اداروں کو حکومت کے مطابق نہیں بلکہ اپنے مطابق چلاتے ہیں جوڈیشل کمیشن میں کچھ اضافی ثبوت جمع کرائے ہیں جو پہلے جمع کروا دینے چاہئیں تھے،آراوز یا پریزائیڈنگ آفیسرز نے تھیلے کھول کر قانون توڑا، (ن)لیگ یہ تاثر دے رہی ہے کہ انہوں نے یہ تھیلے شغل کے طورپر کھولے، نادرا کی رپورٹ ہے کہ 93ہزار ووٹوں کی تصدیق نہیں ہو سکی، ان 93ہزار شناختی کارڈز کی تصدیق کرائیں گے عمران خان کی باتوں میں کتنی صداقت ہے کیا وہ اپنی کہی ہوئی باتیں جوڈیشل کمیشن میں ثابت کرپائیں گے اس کا فیصلہ آنے والا وقت ہی کرئے گا۔

سانحہ نلتر ہیلی کاپٹر حادثہ میں جاں بحق ہونیوالوں کے غم میں پوری قوم افسردہ ہے،دفتر خارجہ میں نلترحادثہ میں مرنیوالوں کی یاد میں تعزیتی ریفرنس منعقد کیا گیا،وزیراعظم محمدنوازشریف نے نلتر حادثے میں ہلاک ہونیوالے فلپائن اور ناروے کے سفراء ،ملائشیا اور انڈونیشیا ء کے سفیروں کی بیگمات کو ستارہ پاکستان کے اعزاز سے نوازنے کا اعلان کیا،وزیراعظم کا کہنا تھا کہ نلتر حادثے نے پاکستان سے بہترین دوست چھین لیے پوری قوم حادثے پر افسردہ ہے ہماری دلی ہمدردیاں غمزدہ خاندانوں کے ساتھ ہیں،پاکستانی پائلٹس نے جان پر کھیل کر مہمانوں کی زندگیاں بچانے کی کوشش کی ،پائلٹس کو عظیم مہمانوں کی فکر تھی ، آنجہانی سفیر کی خدمات کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا، قوم انڈونیشیاء اور ہالینڈ کے سفیروں کی صحت یابی کیلئے دعا گو ہے، تقریب میں جاں بحق افراد کی یاد میں ایک منٹ کی خاموشی اختیار کی گئی،ادھر ناروے ،فلپائن،انڈونیشیا اور ملائشیا کے سفارتخانوں میں تعزیت کا سلسلہ جاری رہا ،وزیراعظم کے مشیر برائے خارجہ امورسرتاج عزیز،معاون خصوصی طارق فاطمی نے تعزیتی کتاب میں اپنے اپنے تاثرات درج کیے، وزیراعظم کے مشیر برائے خارجہ سرتاج عزیز و معاون خصوصی طارق فاطمی کاکہنا تھا کہ پاکستانی قوم 8مئی کو نلتر ہیلی کاپٹر حادثے میں ناروے اور فلپائن کے سفیروں جبکہ انڈونیشیاء و ملائیشیاء کے سفراء کی بیگمات کے جاں بحق ہونے پر غمناک ہے، پوری پاکستانی قوم اور حکومت مذکورہ بالا واقعہ پر دل گرفتہ ہے اور ناروے، فلپائن، انڈونیشیا و ملائیشیاء کی حکومتوں و عوام سے دلی تعزیت کا اظہار کرتا ہے کیونکہ یہ ایک اندوہناک واقعہ تھا۔اس میں کوئی شک نہیں کہ سانحہ نلتر ایک دل دہلا دینے والا سانحہ تھا اورپاکستان میں غیرملکی سفیروں کے ساتھ پیش آنے والا ایسا حادثہ تھا جومدتوں لوگوں کے ذہنوں میں رہے گا۔

دھرنے والے بھی گزشتہ روز ہی پہنچ گئے تھے کوئی رکاوٹ نہیں ڈالی گئی، اس مرتبہ یہ دھرنا خیبرپختونخوا صوبے کے حقوق پر ہے ماشااللّہ قیادت وزیراعلیٰ پرویز خٹک کررہے ہیں، پوری کابینہ ساتھ ہے۔ مطالبہ فنڈز اور لوڈشیڈنگ سے نجات ہے۔

مزید : ایڈیشن 1