خیبر پختونخواحکومت اصلاحاتی فارمولے کیساتھ پٹواری راج کیخلاف ان ایکشن

خیبر پختونخواحکومت اصلاحاتی فارمولے کیساتھ پٹواری راج کیخلاف ان ایکشن

لاہور(اپنے نمائندے سے ) پنجاب حکومت سالہا سال سے پٹواری راج کے خاتمے کا نعرہ لگانے کے باوجود کوئی عملی نظام وضع نہ کر سکی جبکہ خیبر پختونخواہ حکومت اصلاحاتی فارمولے کیساتھ پٹواری راج کیخلاف میدان میں آگئی ،پٹواری، قانگواور تحصیلداروں کی کرپشن کی روک تھام کے لئے نیا فارمولا بروئے کار آگیا ، تفصیلات کے مطابق انتقالات کی تصدیق کے بعد تحصیلداران سرکاری واجبات کے علاوہ رشوت وصولی سے انکاری کیلئے باقاعدہ بیان حلفی دیں گے جس پر متعلقہ سائلین کے رابطہ نمبرز تحریر ہو ں گے جن کی باقاعدہ ،ڈپٹی کمشنر اور اسسٹنٹ کمشنر آفس تصدیق کرے گا جبکہ خیبر پختونخواکے ریونیو افسران اور سٹاف انتقالات اور فرد کی کاپی درخواست گزار کو 7یوم کے اندر دینے کے پا بند ہوں گے خیبر پختونخواہ کی عوام کو نئے نظام سے آگاہ کرنے کے لئے تشہیر ی مہم بھی شروع کر دی گئی ہے جس کے مطابق پٹواریوں ،قانگو،تحصیلداروں کو رشوت ،کرپشن سے روکنے کے لئے ایک فارمولا بروئے کار لایا گیا ہے جس کے تحت ریونیو سٹاف کام کرے گا اس عمل کی باقاعدہ مانیٹرنگ اور تصدیق بھی کی جائے گی ،سائلین کو انتقالات کے اجراء کے بعد متعلقہ ریونیو افسر،قانگواور تحصیلدار باقاعدہ بیان حلفی دے گا کہ اس نے سائل سے مروجہ سرکاری واجبات کے علاوہ ،اس کے عوض کوئی پیسہ رشوت کی مد میں وصول نہ کیا ہے اس بیان حلفی پر سائلین کے رابطہ نمبردرج ہوں گے جن کی باقاعدہ تصدیق ڈپٹی کمشنر اور اسسٹنٹ کمشنر آفس سے ہو گی کہ آیا سائل نے ڈاکومینٹ کے حصول یا ااجراء کے لئے کوئی پیسہ یا رشوت تو نہیں دی یا اس سے کسی نے مطالبہ تو نہیں کیا ،سائل سے تصدیق کے بعد اگر کسی ریونیو افسر،قانگو یا تحصیلدار کے خلا ف رشوت وصولی کی کوئی شکائت وصول ہوئی تو اس کے خلاف فوری کاروائی عمل میں لائی جائے گی،اس کے علاوہ اس فارمولے کے مطابق ریونیو افسر اور سٹاف اس بات کا پابند ہو گاکہ کہ وہ درخواست گزار کو انتقال یا فرد کی کاپی 7یوم کے اندر فراہم کرے،ان ایام کے اندر کاپی فراہم نہ کرنے کی صورت میں متعلقہ ریونیو افسراور سٹاف کے خلاف بھی کاروائی عمل میں لائی جائے گی، اس سے قطع نظر کے پنجاب میں پٹوار کلچر کے خاتمے کے نعرے کو حقیقت میں بدلنے کیلئے اربوں روپے کے پراجیکٹ شروع کئے گئے جو عوام کو خاطر خواہ نتائج نہ دے سکے۔ پٹواری راج

مزید : صفحہ آخر