قصور، موٹر سائیکل رکشہ میں آگ لگنے سے ایل جاں بحق، 7افراد جھلس گئے، ورثا کا احتجاج

قصور، موٹر سائیکل رکشہ میں آگ لگنے سے ایل جاں بحق، 7افراد جھلس گئے، ورثا کا ...

قصور( بیورورپورٹ) چونیاںآ لٰہ آباد روڈ درباربابا شیخ علمدین کے قریب موٹر سائیکل اور موٹر سائیکل رکشہ کے تصادم کے نتیجہ میں موٹر سائیکل رکشہ میں آگ لگ جانے پر ایک افراد جاں بحق اور دو خواتین سمیت 7افراد شدید جھلس گئے۔حادثہ میں زخمی ہونیوالے افراد کے لواحقین اور قریبی رشتہ اروں نے ہسپتال چونیاں کے ڈاکٹرز کی عدم غفلت پر احتجاج کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ پنجاب اور سیکریٹری ہیلتھ سے فوری تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے ۔تفصیلات کے مطابق رکشہ ڈرائیور بلال احمد مسافروں کو لیکر الہٰ آباد کی جانب آ رہا تھا جب وہ دربار بابا شیخ علمدین کے قریب پہنچا تو مخالف سمت سے آنے والی موٹر سائیکل سواروں کو بچاتے ہوئے رکشہ قریب کھیتوں میں الٹ گیا جس کے نتیجے میں رکشے کی ٹینکی پھٹ گئی اور اس میں آگ لگ گئی۔ جس نے سواریوں کو اپنی لپیٹ میں لے لیا اور ایک شخص محمد عاشق ولد محمد منشاء موقع پر ہی جاں بحق ہو گئے جبکہ دیگر سواریاں دو خواتین صائمہ بی بی ،ارم فاطمہ اور بلال ،محمد سلیمان ،گلزار احمد ،مشتاق احمد اور سجاد بری طرح جھلس گئے جب حادثہ میں زخمی ہونیوالے افراد کو سول ہسپتال چونیاں طبی امداد کیلئے پہنچایا گیا تو وہاں پر ڈیوٹی پر تعینات ایک ڈاکٹر موجود تھااور زخمیوں کی مرہم پٹی کرنے کیلئے کوئی عملہ نہ تھا جس پر زخمی ہونیوالوں کے ورثاء نے ہسپتال کے باہر احتجاج کیا۔ اس موقع پر انہوں نے کہا کہ کتنے دکھ کی بات ہے کہ وزیر اعلیٰ پنجاب لوگوں کی جان و مال کی حفاظت کی بات کرتے ہیں مگر یہاں چونیاں ہسپتال میں کوئی مسیحا نہ ہونے پر مریضوں کا کوئی پرسان حال نہیں ،انہوں نے فوری تحقیقات کرنے کے ساتھ ڈاکٹروں کی حاضری کو یقینی بنانے کا مطالبہ کیا ہے ۔

مزید : علاقائی