سانحہ کراچی ، اے پی سی ملتوی یا مختصر کرنے کی ایم کیوایم کی تجویز مسترد، مولانافضل الرحمان کی تجویز پر بریفنگ کی ہدایت

سانحہ کراچی ، اے پی سی ملتوی یا مختصر کرنے کی ایم کیوایم کی تجویز مسترد، ...
سانحہ کراچی ، اے پی سی ملتوی یا مختصر کرنے کی ایم کیوایم کی تجویز مسترد، مولانافضل الرحمان کی تجویز پر بریفنگ کی ہدایت

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) سانحہ کراچی کی وجہ سے آل پارٹیز کانفرنس ملتوی کرنے سے متعلق متحدہ قومی موومنٹ کی تجویز مسترد کردی گئی جبکہ مولانافضل الرحمان کی تجویز منظور کرتے ہوئے اجلاس شروع کردیاگیا۔

پاک چین اقتصادی راہداری منصوبے پر بریفنگ کے لیے بلائی گئی پارلیمانی رہنماﺅں کی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نواز شریف کاکہناتھاکہ کراچی واقعے کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے ، یہ انتشار اور بدامنی پھیلانے کی مذموم کوشش تھی جس میں پرامن لوگوں کو نشانہ بنایاگیاجنہوں نے ہمیشہ پاکستان کی بہتری کے لیے کام کیا۔

وزیراعظم کے خطاب کے بعد ایم کیوایم کے رہنماءڈاکٹرخالدمقبول صدیقی نے کہاکہ کراچی سانحے پر ہم سب افسردہ ہیں ،نہتے شہریوں کو خون میں نہلادیاگیا، اقتصادی راہداری منصوبے پر بریفنگ کو مختصر یا ملتوی کرکے ہم سب اگر کراچی چلے جائیں تو بہترہوگاجس پر وزیراعظم کاکہناتھاکہ وہ کراچی جانے کوتیارہیں ۔

اسفند یارولی کاکہناتھاکہ اس سیشن کو مختصرکردیں تو فائدہ نہیں ، اسے جاری رکھیں ، تفصیلی میٹنگ ہونی چاہیے یا پھر بے شک ملتوی کردیں جس پر وزیراعظم نے کہاکہ اکثریت کا فیصلہ ہی ان کا فیصلہ ہے ، جیسے چاہیں ویسے کرلیں ۔

مولانافضل الرحمان کاکہناتھاکہ اجلاس چونکہ بلایاجاچکاہے اور معلوم نہیں کہ اگلے دوروز کس کی کیا کیا مصروفیات ہیں ،کوئی کہاں ہوگا؟ اس اجلاس کی اپنی اہمیت ہے اور کراچی سانحے کی اہمیت سے بھی انکار نہیں ، اجلاس جاری رکھیں ، وزیراعظم کراچی جاناچاہتے ہیں تو تسلی سے چلے جائیں ، یہ فیصلہ خوش آئند ہے ۔

مولانافضل الرحمان کا موقف جاننے کے بعد وزیراعظم نے شرکاءکو بریفنگ دینے کی ہدایت کردی جس کے بعد اجلاس باضابطہ طورپر شروع ہوگیا۔

مزید : اسلام آباد /اہم خبریں