چیئرمین نیب پر دباﺅ کون ڈال رہا ہے؟

چیئرمین نیب پر دباﺅ کون ڈال رہا ہے؟

نیب چیئرمین جسٹس(ر) جاوید اقبال کے مطابق وہ اپنے فرائض آئین اور قانون کے مطابق دیانت داری سے ادا کر رہے ہیں،اِس لئے کسی دباﺅ میں نہیں آئیں گے، ان کا یہ ردعمل اس اطلاع کے بعد سامنے آیا کہ بعض اہم ریفرنس واپس لینے کے لئے ان پر دباﺅ ڈالا گیا، اور انہوں نے انکار کر دیا،یہ خبر نیب کے ترجمان یا خود چیئرمین نیب کی طرف سے جاری نہیںہوئی، اس کے لئے ذرائع کا سہارا لیا گیا ہے، اور ذرائع ہی نے یہ انکشاف کیا کہ انہوں نے جھکنے سے انکار کر دیا اور رابطہ کرنے پر دباﺅ کے الزام کی تائید کی۔ بلاشبہ نیب کی طرف سے ان دِنوں جن ریفرنسوں کی پیروی اور جن شکایات کے حوالے سے تحقیقات کی جا رہی ہیں،ان میں ملوث افراد بااثر ہیں اور اب تو سابق صدر آصف علی زرداری، ان کی ہمشیرہ فریال تالپور بھی منی لانڈرنگ ریفرنسوں میں سماعت اور انکوائریوں کا سامنا کر رہی ہیں۔ سابق وزیراعظم سزا کے بعد اب کوٹ لکھپت جیل میں ہیں،سپیکر سندھ اسمبلی بھی گرفتار ہیں، بلاول بھٹو اور سندھ کے وزیراعلیٰ مراد علی شاہ کو بھی بلایا گیا،جبکہ سابق وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف، ان کے صاحبزادے حمزہ شہباز عدالت میں تاریخیں بھگت رہے ہیں، خواجہ سعد رفیق اور سلمان رفیق بھی گرفتار ہیں۔ تحریک انصاف کے رہنما اور سابق سینئر صوبائی وزیر عبدالعلیم خان جیل میں ہیں۔یوں بہت سے اہم حضرات کے خلاف انکوائریاں چل رہی ہیں،ان میں سے بعض حضرات کا تعلق برسر اقتدار جماعت سے بھی ہے۔ اس وقت جو صورتِ حال ہے اس کے مطابق زیادہ الزام اور انکوائریوں کا تعلق تو پیپلزپارٹی اور مسلم لیگ(ن) سے ہے، جبکہ چند انکوائریاں تحریک انصاف والوں کے خلاف بھی ہیں، ان حالات میں اور جس انداز میں یہ خبر بریک کر کے شائع کرائی گئی اس سے تو یہی تاثر بنتا ہے کہ آج کے وفاق کی حزب ِاختلاف کی طرف اشارہ ہے اور ان حالات میں یہ کوئی مناسب بات نہیں کہ کسی کا نام نہیں لیا گیا اور لوگ پیپلزپارٹی اور مسلم لیگ(ن) کا نام لے رہے ہیں۔ نیب کے حوالے سے پہلے ہی تنقید ہو رہی ہے۔ پیپلزپارٹی اور مسلم لیگ(ن) والے برملا الزام لگا رہے ہیں،اِس لئے بہتر تو یہ تھا کہ یہ خبر شائع نہ کرائی جاتی اور نہ الیکٹروانک میڈیا تک جاتی اور متعلقہ محکموں کے تعاون سے دباﺅ ڈالنے والوں کے خلاف کارروائی کی جاتی،لیکن ذرائع کے حوالے سے ایسی خبر چھپوانے سے معاملے کو سیاسی بنا دیا گیا اور اب لوگ پوچھ رہے ہیں کہ نیب کی تحقیقات جلد کیوں پوری نہیں ہوتیں اور بوقت ِ سماعت یہ کیوں پتہ چلتا ہے کہ ریفرنس کمزور ہے۔ چیئرمین صاحب اگر دباﺅ میں ہیں تو انہیں دباﺅ ڈالنے والوں کا کھل کر نام لینا چاہئے۔

مزید : رائے /اداریہ