وہ آدمی جسے پیدا ہوتے ہی اس کی ماں ائیرپورٹ کے ٹوائلٹ میں چھوڑ گئی، 33 سال بعد اس نے اپنے والدین کا سراغ لگایا تو ایسا انکشاف کہ پھر دل ٹوٹ گیا

وہ آدمی جسے پیدا ہوتے ہی اس کی ماں ائیرپورٹ کے ٹوائلٹ میں چھوڑ گئی، 33 سال بعد ...
وہ آدمی جسے پیدا ہوتے ہی اس کی ماں ائیرپورٹ کے ٹوائلٹ میں چھوڑ گئی، 33 سال بعد اس نے اپنے والدین کا سراغ لگایا تو ایسا انکشاف کہ پھر دل ٹوٹ گیا

  


لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ میں ایک آدمی جسے پیدا ہوتے ہی اس کی ماں ایئرپورٹ کے ٹوائلٹ میں چھوڑ گئی تھی، 33سال بعد بالآخر اس کو ماں باپ کا سراغ ملا تو ایسا انکشاف ہوا کہ ایک بار پھر دل ٹوٹ گیا۔ میل آن لائن کے مطابق سٹیو ہائیڈز نامی اس شخص کو 10اپریل 1986ءکو اس کی ماں گیٹ وِک ایئرپورٹ کے ٹوائلٹ میں چھوڑ گئی تھی۔ اس نے جوان ہونے کے بعد میڈیا کے ذریعے کئی بار اپیلیں کیں اور لوگوں کو اپنے ماں باپ کی تلاش میں مدد کے لیے کہا لیکن اس کے ماں باپ کا کوئی سراغ نہ مل سکا۔

گزشتہ دنوں اس نے ڈی این اے ٹیسٹ کے ذریعے اپنے ماں باپ کی تلاش کرنے کا فیصلہ کیا۔ ماہرین نے اس کا ڈی این اے ٹیسٹ کیا اور اس کے ماں باپ کی شناخت اسے دے دی۔ جب اس نے اس شناخت کے مطابق ماں باپ سے رابطہ کیا تو یہ سن کر اس کا دل ایک بار پھر ٹوٹ گیا کہ اس کی ماں کا چند سال پہلے انتقال ہو چکا تھا۔ تاہم اس کا باپ اوربھائی بہن اب بھی زندہ تھے۔ سٹیو کا کہنا ہے کہ ”میں اپنے باپ اور بھائی بہنوں کے ساتھ اب رابطے میں ہوں اور جلد ہماری ملاقات بھی ہو گی۔ میرے بہن بھائی جانتے ہی نہیں تھے کہ ان کا کوئی اور بھائی بھی ہے۔ جب میرے رابطہ کرنے پر انہیں یہ معلوم ہوا تو ان کو بہت حیرت ہوئی اور اب وہ مجھ سے ملنے کے لیے بہت بے چین ہیں۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس